قومی

40 کروڑ کی ہیروئن ضبط دہلی- یوپی میں گزشتہ 5 سال سے منشیات سپلائی کرنے والے اسمگلر گرفتار

نئی دہلی،29؍مارچ (ہندوستان اردو ٹائمز) دہلی پولیس نے نارکوٹکس ڈرگ کارٹیل کا پردہ فاش کرتے ہوئے 2 لوگوں کو گرفتار کیا اور ان سے 10 کلو ہیروئن برآمد کی۔ جس کی بین الاقوامی مارکیٹ میں قیمت تقریباً 40 کروڑ روپئے ہے۔ برآمد کی گئی ہیروئن میانمار سے منی پور کے راستے ہندوستان میں اسمگل کی گئی تھی۔ اسپیشل سیل کے ڈی سی پی جسمیت سنگھ کے مطابق ان کی ٹیم اس اطلاع پر کام کر رہی تھی کہ منی پور، آسام، یوپی، بہار اور دہلی میں منشیات کا ایک بین الاقوامی کارٹیل سرگرم ہے۔ اس کارٹیل کے ارکان ہیروئن کو میانمار سے اسمگل کر کے منی پور کو سپلائی کرنے اور ملک کے مختلف حصوں میں مزید منشیات سپلائی کرنے میں ملوث تھے

اس معلومات کو مزید 4 ماہ کے لیے تیار کیا گیا۔ اس عمل کے دوران اس کارٹیل کے ارکان کی شناخت کی گئی اور ان کی سرگرمیوں کا مشاہدہ کیا گیا۔ 24 مارچ کو ایک خاص اطلاع ملی تھی کہ اس گینگ کے دو ارکان نذیر عرف ناظم اور دنیش سنگھ جھارکھنڈ سے ہیروئن کی ایک بڑی کھیپ لے گئے تھے۔ معلومات کے مطابق وہ اپنی ماروتی ایس ایکس 4 سے آئی ایس بی ٹی سرائے کالے خان آ رہا تھا تاکہ اس کھیپ کو اپنے ایک جاننے والے کو پہنچا سکے۔ پولیس ٹیم نے جال بچھا کر کار میں سوار دو افراد کو پکڑ لیا۔ دونوں کے تھیلوں سے 06 کلو گرام ہیروئن یعنی 3-3 کلو گرام برآمد کر لی گئی۔ کار کی تلاشی کے دوران کار کی پچھلی سیٹ کے نیچے سے 4 کلو ہیروئن برآمد ہوئی۔گرفتار کیے گئے دونوں سپلائرز سے پوچھ گچھ میں انکشاف ہوا ہے کہ وہ منشیات کے ایک بڑے بین الاقوامی کارٹیل کے رکن ہیں۔ دونوں نے گزشتہ5 سالوں سے دہلی این سی آر اور یوپی کے کچھ حصوں میں منشیات کی سپلائی میں اپنے ملوث ہونے کا انکشاف کیا ہے۔

اس نے مزید بتایا ہے کہ اس نے یہ ہیروئن جھارکھنڈ کے چترا ضلع کے ایک شخص سے خریدی تھی اور اس نے 6 کلو ہیروئن دہلی کے ایک شخص کو اور باقی 4 کلوگرام غازی پور یوپی کے ایک شخص کو پہنچانی تھی۔ دونوں نے مزید انکشاف کیا ہے کہ ان کے میانمار اور منی پور میں ہیروئن سپلائی کرنے والوں کے ساتھ روابط ہیں۔ میانمار سے منی پور میں لائی جانے والی زیادہ تر ہیروئن آسام اور اروناچل پردیش سے ملحقہ ریاستوں میں بھیجی جاتی ہے اور یہ منشیات دہلی سمیت ملک کے دیگر حصوں میں سپلائی کی جاتی ہیں۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button