جموں کشمیر

لائن آف کنٹرول پر سیز فائر کی پھر خلاف ورزی : بی ایس ایف اور فوج کے 4 جوان سمیت 3 شہری جاں بحق

3 پاکستانی کمانڈوز سمیت 5 فوجی بھی جوابی کارروائی میں ڈھیر

سری نگر؍نئی دہلی ، 13؍نومبر ( آئی این ایس انڈیا) پاکستانی فوج نے جمعہ کی صبح ایل او سی میں سیز فائر کی خلاف ورزی انجام دے ڈالی ۔جس میں بی ایس ایف اورانڈین آرمی کے 4 جوان جاں بحق ہوئے ، جب کہ اس کی زد میں آکر4 شہری بھی ہلاک ہوگئے ہیں۔ جوابی کارروائی میں ہندوستانی فوج نے 3 پاکستانی کمانڈوز سمیت 5 فوجیوں کوڈھیر کرڈالا۔خیال رہے کہ پاکستانی رینجرز کی طرف سے جموں و کشمیر کے پونچھ کیرن ، گوریج سیکٹر میں سیز فائر کی خلاف ورزی کی گئی۔ کپواڑہ سے بارہمولہ تک ، پاکستانی فوج نے فائرنگ کی ۔پاکستان کی فائرنگ سے بارہمولہ سیکٹر میں بی ایس ایف کے سب انسپکٹر راکیش ڈو بھال شہید ہوئے۔ راکیش ڈوبھال اتراکھنڈ میں واقع گنگا نگر کے رہائشی تھے ۔ البتہ جوابی کارروائی میں ہندوستانی فوج نے متعدد پاکستانی بنکروں کو بھی تباہ کیا ۔ اس کے علاوہ فیول ڈمپ اور لانچ پیڈ بھی تباہ کردیئے گئے ، وہیں جوابی کارروائی میں تقریباً 12 پاکستانی فوجی بھی زخمی ہوئے ۔ کرنل راجیش کالیا نے بتایا کہ آج ایل او سی واقع کیرن سیکٹر میں کچھ مشکوک سرگرمیاں دیکھی گئیں۔ اس کے بعدتمام فوجیوں کو الرٹ کردیا گیا۔اس دوران پاکستانی فوج کی طرف سے فائرنگ کا آغاز ہوا، تاہم ہندوستانی فوج نے بھی ’’دندانِ شکن‘‘جواب دینے سے گریز نہیں کیا۔یہ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ ممکنہ طور پر پاکستانی فوج سیز فائر کی آڑ میں دہشت گردوں کی دراندازی کی کوشش کر رہی تھی ۔غور طلب ہے کہ اسی ہفتے میں سیز فائر کی خلاف ورزی کا یہ دوسرا موقع ہے۔ ہندوستانی فوج کے ذرائع کے مطابق رواں سال 4052دفعہ سیز فائر کی خلاف ورزی کی گئی ہے ۔ان میں سے 128 نومبر میں اور 394 اکتوبر میںانجام دیئے گئے ،جب کہ گزشتہ ایک سال میں 3233 دفعہ سیز فائر کی خلاف ورزی کی گئی ہے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close