یوپی

گاؤں گاؤں کرونا پھیل گیا،یوگی جی طبی نظم و نسق سنبھالیں،کمبھ اورانتخابی ریلیاں بندنہیں ہوئیں، نتیجتاً لوگ مر رہے ہیں،ذمہ دار کون ہے:اے آئی ایم ایف

نئی دہلی ، 7مئی ( ہندوستان اردو ٹائمز ) رائے بریلی کے چھوٹے سے گاؤں سلطان پور کھیڑا میں موت کا قہر جاری ہے، جہاں محض چند ہی دنوں میں 17 افراد ابدی نیند سوگئے ۔ اس کا تذکرہ کرتے ہوئے آل انڈیا مائنارٹیزفرنٹ کے چیئرمین ڈاکٹر سید محمد آصف نے اتر پردیش کی یوگی سرکار سے اپیل کی ہے کہ لوگوں کی زندگیاں بچاناآئینی فریضہ ہے، لیکن فیاحسرتا یوگی سرکاراپنے فرائض کی انجام دہی میں ناکام ہوگئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سلطان پور کھیڑا کی محض 2000 آبادی میں 70 فیصد لوگ بیمار ہیں، اسی طرح کی صورتحال ریاست کے ہزاروں دیہات کی ہے، لوگ تیزی سے فوت کررہے ہیں ۔ صورتحال یہ ہے کہ لوگوں کو کھانسی بخار اور یرقان کی دوائی لینا بھی دشوار ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ کرونا کا سنامی گاؤں کی طرف بڑھ گیا، جس کی یوگی حکومت کو کوئی فکر نہیں ہے۔ ایسے تمام دیہاتوں میں پوری آبادی کی کورونا ٹیسٹنگ ضروری ہے۔

حکومت کو چاہئے کہ وہ طبی مشینری کو گاؤں بھیجے، تاکہ بڑی آبادی کو موت سے بچایا جاسکے۔ ڈاکٹر آصف نے یوگی سرکار سے کہا کہ اب تک ضلعی انتظامیہ نے کسی قسم کا کوئی نوٹس نہیں لیا ہے، نہ تو کوئی ٹیم گاؤں پہنچی ہے اور نہ ہی سینی ٹائزیشن کا کوئی کام ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر گا ؤں کو اس وبا سے نہیں بچایا گیا تو شہروں کو بچانا ناممکن ہوگا۔ کورونا سے بچاؤ ٹیم کو تمام دیہاتوں میں متحرک اور تعینات کرنے کی ضرورت ہے۔ زندگی بچانے والی ادویات کے ساتھ ہر گاؤں کو آکسیجن مہیا کرایا جانا بھی بہت ضروری ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close