یوپی

اترپردیش: طالبہ کو اغوا کرکے اجتماعی عصمت، متاثرہ نے زہر کھا کر لی خودکشی

میرٹھ،03؍ اپریل (آئی این ایس انڈیا) اترپردیش کے میرٹھ میں پولیس تھانہ سردھنا کوتوالی کے ایک گاؤں میں ٹیوشن سے واپس لوٹ رہی 10ویں جماعت کی طالب کو گاؤں کے ہی چار نوجوانوں نے مبینہ طور پر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ زخمی طالبہ نے گھر پہنچ کر مبینہ طور پر زہریلی اشیاء کا استعمال کرلیا جس کی وجہ سے اس کی حالت خراب ہوتی گئی ،اسپتال میں زیر علاج اس کی موت ہوگئی۔ پولیس نے یہ اطلاع دی۔ایس پی کیشو کمار نے بتایا کہ جمعرات کو اس واقعے میں چار نوجوان ملوث تھے۔ انہوں نے بتایا کہ گھر سے طالبہ کا ایک خودکش نوٹ برآمد ہوا ہے ، جس میں طالبہ نے لکھن کے علاوہ وکاس عرف مرلی کا بھی ذکر کیا ہے۔

کمار نے بتایا کہ اس کی بنیاد پر پولیس نے دونوں ملزموں کو گرفتار کرلیا ہے اور دو دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لئے کوششیں جاری ہیں۔دوسری جانب سردھانہ پولیس نے بتایا کہ طالبہ کے اہل خانہ کی تحریر کی بنیاد پر یہ نابالغ لڑکی دسویں جماعت کی طالبہ تھی اور جمعرات کو گھر سے ٹیوشن پڑھنے گئی تھی ۔ پولیس کے مطابق ٹیوشن سے واپسی کے دوران کپساڈ گاؤں کے رہائشی چار نوجوانوں نے بچی کو اغوا کیا اور ٹاور کے قریب واقع ایک گھر میں اجتماعی عصمت دری۔ کی۔پولیس نے بتایا کہ بچی کسی طرح اپنے گھر پہنچی اور گھر والوں کو اس واقعہ سے آگاہ کیا۔ بعدازاں زخمی ہونے والی طالبہ نے گھر میں کوئی زہریلا اشیاء کھالیا ، جس سے اس کی حالت مزید خراب ہوگئی اور شام 6 بجے اسے مودی پورم کے ایس ڈی ایس گلوبل اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ پولیس کے مطابق دوران علاج اس کی موت ہوگئی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close