یوپی

سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کی یوگی پر تنقید: یوپی میں ہاتھرس جیسے واقعات پیش آ رہے ہیں ،اور یوگی بنگال میں ہیں : اکھلیش یادو

لکھنؤ ، ۲؍مارچ ( آئی این ایس انڈیا ) یوپی کے سابق وزیر اعلی اور سماج وادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے یوپی کے ہاتھرس میں ہونے والے واقعے پر یوگی حکومت کو سخت نشانہ بنایا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ یوپی میں ہاتھرس جیسے واقعات رونما ہورہے ہیں۔ بیٹیاں ریاست میں میں محفوظ نہیں ہیں ، اور یہ لوگ رام راجیہ لانے کی بات کررہے ہیں ۔ اور سی ایم بنگال میں گھوم رہے ہیں۔ سابق وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہاتھرس کی متاثرہ بیٹی سے ملنے کے لئے ایس پی کے ایک وفد کو بھیجا جائے گا۔ میں خود اس بیٹی سے ملنے جاؤں گا۔ ایس پی سپریمو اکھلیش نے کہا کہ ریاست کے عوام ایس پی کی طرف امید کی نظر سے دیکھ رہے ہیں۔ ہم پہلے ہی بتا چکے ہیں کہ بی جے پی حکومت نے سسٹم کو خراب کردیا ہے ، منڈی کا نظام ختم ہورہا ہے۔ ہاتھرس کے واقعہ پر اظہار خیال کرتے ہوئے اکھلیش یادو نے کہا کہ ہاتھرس جیسے واقعات سے حکومت کو کوئی پرواہ نہیں ہے۔ وزیر اعلی خود کہتے ہیں ’ٹھونکو‘ ۔ایسی صورتحال میں یہ سب ہونا ہے۔ پولیس مکمل طور پر خود مختار ہوگئی ہے۔ بی جے پی کو اکثریت کا بھرم ہے۔ خیال رہے کہ بیٹی سے چھیڑخانی کی شکایت کرنے پر پیر کی شام ہاتھرس کے نوجر پور میں گولی مار کر ہلاک کردیا گیا ۔ بتایا جارہا ہے کہ ملزم متاثرہ کے اہل خانہ پر چھیڑ چھاڑ کا مقدمہ واپس لینے کے لئے دباؤ ڈال رہا تھا۔ مقتول کی بیٹی نے 6 افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ ان میں سے ایک کو گرفتارکیا جاچکا ہے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close