یوپی

بریلی : پھر ’لوجہاد‘ کا شوشہ، ہندو وادی تنظیموں کا تھانہ گھیراؤ ، ہنگامہ آرائی

بریلی ،۲۰؍اکتوبر ( آئی این ایس انڈیا ) یوپی کے بریلی میں نام نہاد ہندووادی تنظیم کے عہدیداروں نے مبینہ لوجہاد کے نام پرمنگل کے روز قلعہ پولیس اسٹیشن پہنچ کر جم کر ہنگامہ آ رائی کی۔ پولیس عہدیداروں نے اس معاملے میں کارروائی کا یقین دلایا ، لیکن ہندو وادی تنظیم کے ارکان لڑکی کی بازیابی پر ڈٹے رہے۔ اس دوران مشتعل تنظیم کے ارکان نے نعرے بازی کرتے ہوئے توڑ پھوڑ بھی کی ہے،صورتحال پر کنٹرول کے لئے پولیس کالاٹھی چارج کا سہارا لینا پڑا۔ جس میں کئی لوگوں کے زخمی ہونے کی خبر ہے ۔ تناؤ کے خوف کے پیش نظر فورس میں اضافہ کردیا گیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق کہ پیر کے روز شہر کے پریم نگر پولیس اسٹیشن سے تعلق رکھنے والی لڑکی کی ویڈیو سامنے آئی تھی، جس میں لڑکی نے اپنے والدین سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ وہ بالغ ہے اور اس نے اپنی پسند کے دوسرے مذہب کے لڑکے’ بلال خان روہیلہ‘ سے شادی کرلی ہے۔ تاہم ویڈیو میں بلال کہیں نظر نہیں آرہا ہے۔ لڑکی نے یہ بھی اپیل کی کہ اس کے عاشق بلال اور اس کے اہل خانہ کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی جانی چاہئے۔ اس نے ایس ایس پی سے سیکورٹی کا بھی مطالبہ کیا ہے ۔تاہم لڑکی کے گھر سے غائب ہونے کے بعد اہل خانہ نے دفعہ 366 کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔ پولیس دونوں کی تلاش کر رہی ہے۔ لیکن وشو ہندو پریشد کے کارکنوں نے منگل کے روز قلعہ پولیس اسٹیشن کا گھیراؤ کرتے ہوئے اسے’لو جہاد‘ کا ایک واقعہ قرار د ے کر ہنگامہ آرائی کی۔ پولیس حکام نے اس معاملہ میں کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے ۔ ایس پی سٹی رویندر کمار کے مطابق ایک تحریر 17 اکتوبر کو پولیس اسٹیشن آئی تھی۔ اس دن ایک مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ پولیس کی چار ٹیم عاشق (بلال )کو گرفتار کرنے اور معشوقہ کی بازیابی کے لئے مصروف ِ عمل تھی، کہ ادھر لڑکی کی ویڈیو وائرل ہوگئی ہے۔ جس میں لڑکی نے خود کو بالغ قرار دیتے ہوئے اپناآدھار کارڈ دکھا رہی ہے۔پولیس کے مطابق ہم لڑکی کی بازیابی کے لئے کوشاں ہیں۔ ملزم کو گرفتار کئے جانے کے بعد اسے عدالت میں پیش کیا جائے گا،عدالت کے حکم کے مطابق کارروائی یقینی کی جائے گی ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close