اہم خبریں

یس بینک کے کھاتہ برداروں کی ایک ایک پائی واپس کی جائے: کانگریس

[ad_1]

اعدا دو شمار شیئر کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ مارچ 2014میں یس بینک کا بقایہ قرض 55,633کروڑ روپے تھا۔ مارچ 2015میں یہ 75,550کروڑ روپے، مارچ 2016میں 98,210کروڑ روپے، مارچ 2017میں 1,32,263کروڑ روپے، مارچ 2018میں 2,03,534کروڑ روپے اور مارچ 2019میں 2,41,499کروڑ روپے پر پہنچ گیا۔

سابق وزیر خزانہ نے الزام لگایا کہ صرف یس بینک ہی نہیں موجودہ حکومت کی حکمرانی میں تمام مالیاتی ادار ے بدنظمی کا شکار ہیں۔ مالی سال 2013-14 سے اب تک بینکوں کو 778000 کروڑ روپے قرض کھاتہ میں ڈالنے پڑے ہیں۔ صرف 2018-19 میں ہی 1.83 لاکھ کروڑ روپے کو ڈوبی ہوئی رقم کے زمرہ میں ڈالا گیا۔

[ad_2]
Source link

Tags

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close