ہندوستان

کیا صحیح میں مارچ کے بعد نہیں چلیں گے 100 ، 10 اور 5 روپے کے پرانے نوٹ؟

100، 10 اور پانچ روپے کے پرانے نوٹ کو لے کر بڑی خبر سامنے آرہی ہے ۔ ریزرو بینک آف انڈیا نے جانکاری دی ہے کہ جلد ہی یہ نوٹ چلن سے باہر ہوسکتے ہیں ۔ مارچ کے بعد آر بی آئی سبھی پرانے نوٹوں کو چلن سے باہر کرسکتی ہے ۔ حالانکہ اس سلسلہ میں آربی آئی کی جانب سے آفیشیل طور پر کچھ بھی نہیں کہا گیا ہے ۔ ریزرو بینک آف انڈیا کے اسسٹنٹ جنرل مینیجر بی مہیش نے کہا کہ آر بی آئی ان پرانے نوٹوں کی سیریز کو واپس لینے کے منصوبہ پر کام کررہی ہے ۔

منی کنٹرول کی ایک خبر کے مطابق بی مہیش نے یہ بات ڈسٹرکٹ لیول سیکورٹی کمیٹی کی میٹنگ میں کہی ہے ۔ دراصل 100 روپے ، 10 روپے اور پانچ روپے کے پرانے نوٹ کے بدلے نئے نوٹ پہلے سے ہی سرکولیشن میں آچکے ہیں ۔ ایسے میں اگر پرانے نوٹوں کو بند بھی کیا جائے گا تو لوگوں کو کوئی پریشانی نہیں ہوگی ۔

عام لوگوں کو نہیں ہوگی پریشانی

آپ کو بتادیں کہ ریزرو بینک آف انڈیا نے کہا کہ لوگوں کو نوٹ بندی کے وقت کافی پریشانی ہوئی تھی تو اس مرتبہ آر بی آئی یہ یقینی بنائے گا کہ جتنے پرانے نوٹ سرکولیشن میں ہیں ، اتنے ہی نئے نوٹ مارکیٹ میں آجائیں ، جس سے لوگوں کو کوئی پریشانی نہ ہو اور اس سیریز کو اچانک بند نہیں کیا جائے گا ۔

جانئے کیا کہا تھا آر بی آئی نے ؟

ریزرو بینک آف انڈیا نے سال 2019 میں جب 100 روپے کے نوٹ جاری کئے تھے ، تبھی واضح کردیا تھا کہ پہلے جاری کئے گئے سبھی 100 روپے کے نوٹ بھی قانون طور پر چلتے رہیں گے ۔ اس کے علاوہ آر بی آئی نے 8 نومبر 2016 کو نوٹ بندی کے بعد 2000 روپے نوٹ کے علاوہ 200 روپے کے نوٹ جاری کئے تھے ۔

آپ کو بتادیں کہ آر بی آئی وقتا فوقتا پرانے نوٹوں کو واپس لیتا رہتا ہے اور نئے نوٹ جاری کرتا رہتا ہے ۔ جعلی نوٹوں پر لگام لگانے کیلئے آر بی آئی کی جانب سے یہ قدم اٹھایا جاتا ہے ۔ آفیشیل اعلان کے بعد بند کئے گئے سبھی پرانے نوٹوں کو بینک میں جمع کرانا ہوتا ہے ۔

(نیوز ۱۸ اردو کے شکریہ کے ساتھ )

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close