ہندوستان

اروناچل میں گائوں بسانے کی خبرپراحتجاج،چینی صدرکاپتلانذرآتش

گوہاٹی21جنوری(آئی این ایس انڈیا) چین کے خلاف اروناچل پردیش میں مظاہرے شروع ہوگئے ہیں۔کچھ دن پہلے این ڈی ٹی وی نے اروناچل پردیش کے ذریعہ چین میں گاؤں بسانے سے متعلق خصوصی رپورٹ دی ہے۔نوبھارت ٹائمزمیں بھی ایسادعویٰ کیاگیاہے۔ رپورٹوں کے مطابق سیٹیلائٹ کی تصاویرسے یہ انکشاف ہواہے کہ چین نے اروناچل پردیش میں ایک گاؤں قائم کیاہے جس میں بھارت کی سرحد کے اندر 101 کے قریب مکانات ہیں۔یہ علاقہ بالائی کنارے پرہے۔ اس جگہ پر ہندوستان اور چین کے درمیان ایک طویل عرصے سے تنازعہ چل رہا ہے اور اس جگہ کی شناخت حسا س جگہ کے طور پر کی گئی ہے۔جمعرات کے روزمقامی لوگوں نے ہندوستان کی بالائی سبانسیری بارڈر میں داخل ہو کرچینیوں کی طرف سے گاؤں بنانے کے خلاف احتجاج کیا۔ انہوں نے عوامی سطح پر چینی صدر شی جنپنگ کا ایک مجسمہ بھی نذرآتش کیا اور چین کے خلاف نعرے لگاتے پلے کارڈزبھی دکھائے۔ احتجاج میں شامل لوگوں نے ’واپس چین جائو،ہم ہندوستانی ہیں،بھارت ماتا کی جے‘ جیسے نعرے لگائے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close