ہندوستان

ادھیر رنجن نے لوک سبھا اسپیکر کو لکھا خط : پارلیمنٹ اجلاس کے دوران وقفہ سوال اوروقفہ صفر بحال کرنے کا مطالبہ

نئی دہلی ،28 ؍اگست ( آئی این ایس انڈیا ) جیسے جیسے پارلیمنٹ کے مون سون اجلاس کی تاریخ قریب آرہی ہے، اسی طرح اس پر سیاست بھی شروع ہو رہی ہے۔ سیشن کے دوران وقفہ سوال اور وقفہ صفر کے معاملے پر تنازعہ شروع ہوسکتا ہے۔ لوک سبھا میں کانگریس پارٹی کے رہنما ادھیر رنجن چوہدری نے اس بارے میں لوک سبھا اسپیکر اوم بریلا کو خط لکھا ہے۔ادھیر رنجن چودھری نے اپنے خط میں اسپیکر سے سیشن کے دوران وقفہ سوال اور وقفہ صفر کو بحال کرنے کو کہا ہے۔ چودھری نے لکھا ہے کہ پارلیمانی نظام میں وقفہ سوال اور وقفہ اراکین پارلیمنٹ کو خصوصی حقوق کے طور پر ملا ہے، جس میں وہ حکومت سے سوالات کرنے کے علاوہ ایوان میں اہم امور اٹھاتے ہیں۔ادھیر رنجن چودھری نے اس خدشے کا اظہار کیا ہے کہ وقفہ سوال کے ممبران پارلیمنٹ کو ضروری مسائل اٹھانے کے لیے جو نوٹس دینا پڑتاہے اس نوٹس کی تعداد کم کی جاسکتی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ایسا کرنے سے ارکان پارلیمنٹ کو اپنا نقطہ نظر پیش کرنے کا زیادہ موقع نہیں ملے گا جس کے وہ حقدار ہیں۔لوک سبھا کی کارروائی وقفہ سوال سے شروع ہوتی ہے جس میں حکومت ممبروں کے سوالوں کے جواب دیتی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close