ہندوستان

تصویریں جھوٹ نہیں بولتیں،کپل سبل نے مودی سے چھبتے سوالات کیے

نئی دہلی4جولائی(آئی این ایس انڈیا) کانگریس کے سینئر لیڈراورسابق مرکزی وزیر کپل سبل نے وزیر اعظم نریندر مودی سے چینی دراندازی کے بارے میں کچھ سوالات پوچھے ہیں۔ کپل سبل نے بیان میں کہاہے کہ تصویریں جھوٹ نہیں بولتیں۔ انہوں نے پوچھا ہے کہ کیاوزیراعظم ملک کو جواب دیں گے ۔ کیا اصلی اورتازہ ترین تصاویرہماری سرزمین پرچینی قبضے کی حقیقت نہیں بتاتی ہیں؟ کیایہ ہندوستان کا وہ علاقہ ہے نہیں ہے جس پرچینیوں نے راڈار،ہیلی پیڈ اور دیگر ڈھانچے کھڑے کردیئے ہیں؟

کپل سبل نے مزیدپوچھاہے کہ کیاچینیوں نے وادی گلوان سمیت پیٹرول پوائنٹ 14 پرقبضہ کرلیاہے جہاں 16 بہار رجمنٹ کے 20 فوجیوں نے زبردست قربانی دی؟ کیاچینیوں نے بھی ہندوستانی سرحد کے اندرگرم چشموںکے علاقے پر قبضہ کیا ہے؟کیاچین نے ڈیپسانگ علاقوں میں وائی-جنکشن (ایل اے سی کے 18 کلومیٹر کے فاصلے) تک ہماری اراضی پرقبضہ کر لیاہے؟۔ اس سے ہندوستان کے ڈی بی اوایئرپورٹ کی اسٹریٹجک اہمیت کا خطرہ ہے جوسیاچن گلیشیراورقراقرم پاس میں ہمارے فوجی سامان کی لائف لائن ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ کیا ہندوستان کے سابق وزرائے اعظم لال بہادر شاستری اور اندرا گاندھی ہمارے فوجیوں کے حوصلے بڑھانے کے لیے آگے نہیں گئے تھے؟ کیا پنڈت جواہر لال نہرو نے 1962 میں نیفامیں اگلے مقامات پر ہمارے فوجیوں کے حوصلے بلندنہیں کیے تھے؟ لیکن ایسا لگتا ہے کہ ہمارے موجودہ وزیر اعظم 230 کلومیٹر دورنیمو،لیہ میں ٹھہرے۔

سابق وزیر قانون نے یہ سوال پوچھاہے کہ کیا یہ ٹھیک نہیں ہے کہ بی جے پی کے مشیروں سمیت لداخ میں ہمارے مقامی مشیروں نے وزیر اعظم مودی کو فروری 2020 میں ہماری زمین پر چین کے قبضے کے بارے میں میمورنڈم بھیج دیا؟ وزیر اعظم نے ان پرکیاکارروائی کی؟ اگر وزیر اعظم نے بروقت اقدامات کیے ہوتے توکیاہم پہلے ہی چینیوں کے تجاوزات کو روک نہیں سکتے تھے؟ کپل سبل نے کہاہے کہ اس وقت ضرورت اس بات کی ہے کہ بھارت چین کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کرواضح طورپریہ بتا سکے کہ چینیوں کو ہندوستانی زمین پراپناغیر قانونی قبضہ ترک کرناپڑے گا۔جناب وزیر اعظم ، یہ صرف راج دھرم ہے ، جس پر آپ کوہر قیمت پرچلنا چاہیے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close