دیوبند

ہم نے اپنے اخلاق کردار اور عمل سے سے لوگوں کو متأثر نہیں کیا

میرانپور میں منعقدہ جماعت اسلامی ہند کی میٹنگ سے حافظ عبدالقادر کا اظہار خیال

دیوبند، 23؍ ستمبر (رضوان سلمانی) جماعت اسلامی ہند مغربی اتر پردیش کے ناظم حافظ عبد القادر نے کہا ہے کہ اسلام آیا ہی اس لیے تھا کہ بھٹکتی ہوئی انسانیت کو سیدھی راہ دکھائی جائے۔لہٰذا ضروری ہے کہ اس مشکل دور میں ہم اسلام کے اصل پیروکار بن کر نہ صرف زندگی گزاریں بلکہ دین اسلام کو غالب کرنے کی سعی و جہد میں مصروف ہو جائیں تاکہ کل قیامت کے دن اللہ کے حضور ہمیں اقامت دین کا فریضہ انجام نہ دینے کی پاداش میں ہمیں شرمندہ نہ ہونا پڑے۔

ان خیالات کا اظہار حافظ عبدالقادر نے قصبہ میرانپور میں عنایت اللہ کی سیفی کی رہائش گاہ پر جماعت اسلامی ہند مغربی اترپردیش کی جانب سے جاری مہم ’’اللہ سے وابستہ ہوجائو‘‘ کے تحت منعقدہ ایک میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے اپنے خطاب میں قوموں کے عروج و زوال پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ جو قوم اللہ کی تعلیمات کو فراموش کر دیتی ہے اوراجتماعیت کو پارہ پارہ کرکے اپنی نفسانی خواہشات کے مطابق زندگی گزارتی ہے اس کا یہی حشر ہوتا ہے، مختلف شکلوں میں خدا کا عذاب اسے اپنی گرفت میں لے لیتا ہے۔

انھوں نے کہا کہ آج وطن عزیز میں ہم پر جو پریشانیاں در پیش ہیں وہ اللہ کی طرف سے آزمائش نہیں ہے بلکہ ہماری خدا فراموشی کی وجہ سے اللہ کا عذاب نازل ہو رہا ہے کیوں کہ آزمائش اس وقت ہوتی ہے جب ہم حق پر ہوں، اگر کوئی قوم حق کی طرفدار نہ ہو، حق کی شہادت دینے میں اپنے کو پیش نہ کر سکے، باطل نظریات کے سامنے اسلامی نظریات کی پاسداری نہ کرے تو مختلف قسم کے عذاب خدا کی جانب سے مسلط کر دیے جاتے ہیں۔آج جو وطن عزیز میں اسلام کے خلاف غلط پروپیگنڈا کیا جاتا ہے اس کی اصل وجہ یہی ہے کہ ہم نے دین اسلام کو کو لوگوں کے سامنے اس انداز میں پیش نہیں کیا جس انداز میں پیش کرنے کا اس کا حق تھا۔

ہم نے اپنے اخلاق کردار اور عمل سے سے لوگوں کو متاثر نہیں کیا۔یہی وجہ ہے کہ لوگ اسلام کے خلاف غلط فہمیوں کا شکار ہوگئے۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم لوگوں کے سامنے اسلام کی صحیح تصویر اپنے عمل اخلاق اور کردار کے ساتھ پیش کریں۔دین حنیف کو نہ صرف اپنی زندگی میں داخل کریں بلکہ اس مقصد حیات کو دوسروں تک پہنچانے کا اہم فریضہ بھی انجام دیں۔ انہوں نے مہم کے تعلق سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی لوگوں کے اخلاق و کردار سنوارنے کے ساتھ ساتھ انہیں اسلام کا صحیح اور با شعور نمائندہ بنا کر پیش کرنا چاہتی ہے۔اور لوگوں کو ان کا وہ اصل سبق یاد دلانا چاہتی ہے جسے نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم قرآن کی شکل میں ہمارے لئے لے کر آئے۔ انہوں نے موجود شرکاء سے اپیل کی کہ وہ ایک جماعت کی شکل میں یکجا ہو کر اجتماعیت کو مضبوط کرنے کا اہم فریضہ انجام دیں۔

اس میٹنگ کی صدارت ناظم ضلع وکیل احمد نے کی اور نظامت کے فرائض ڈاکٹر طاہر قمر نے انجام دیے۔ حافظ اظہر کی تلاوت کلام سے بابرکت آغاز ہونے والی اس نشست کا ناظم ضلع کی دعا پر اختتام ہوا۔اس موقع پر عنایت اللہ، محمد سعید، محمد صابر سیفی، پروفیسر، شاہ نظر ثانی ، ڈاکٹر شاداب ، محمد اقبال ، محمد شرف الدین، محمد عادل ، مقیم احمد، ضمیر الدین حافظ اظہر، حاجی پپو، خالد قریشی وغیرہ سینکڑوں لوگ موجود رہے۔ آخر میں کنوینر مقیم احمد نے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button