دہلی

گوگل پر 13 سو کروڑ روپے کا جُرمانہ عائد

نئی دہلی ، 21اکتوبر (ہندوستان اردو ٹائمز ) انٹرنیٹ سرچ کمپنی گوگل پر کمپیٹیشن کمیشن آف انڈیا (سی سی آئی) نے 1,337 کروڑ روپے کا جرمانہ کیا ہے۔ یہ کارروائی اینڈرائیڈ موبائل ڈیوائس سیکٹر میں کئی مارکیٹوں میں اپنی مضبوط پوزیشن کا غلط استعمال کرنے پر کی گئی ہے۔اس کے علاوہ سی سی آئی نے کمپنی کو غیر منصفانہ کاروباری سرگرمیوں کو روکنے اور روکنے کی بھی ہدایت کی ہے۔ سی سی آئی نے کمپنی سے اصلاحات لانے کو بھی کہا ہے۔

سی سی آئی نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ کمپنی اینڈرائیڈ موبائل ڈیوائس ایکو سسٹم مارکیٹ میں اپنی پوزیشن کا ناجائز فائدہ اٹھا رہی ہے۔اسے بہتر کرنا ہے۔دریں اثنا، ممبئی کی ایک خصوصی پی ایم ایل اے عدالت نے ای ڈی کو مفرور اقتصادی مجرم نیرو مودی کی 39 جائیدادوں کو ضبط کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ عدالت نے پی این بی کی درخواست کو بھی اجازت دے دی ہے جس میں نیرو مودی اور اس کی کمپنیوں کے ذریعہ گروی رکھی ہوئی یا گروی رکھی ہوئی نو جائیدادوں کی مانگ کی گئی ہے ،دسمبر 2019 میں مفرور اقتصادی مجرم ایکٹ، 2018 کے مطابق، نیرو مودی کو منی لانڈرنگ کی خصوصی روک تھام ایکٹ، 2002 کے ذریعے مفرور اقتصادی مجرم قرار دیا گیا تھا۔

اس سے نیرو مودی پر قانون کی گرفت اور بھی سخت ہو گئی ہے۔ اب اس کی جائیداد ضبط کر لی جائے گیمسابقتی کمیشن آف انڈیا (سی سی آئی) نے اپریل 2019 میں ملک میں اینڈرائیڈ پر مبنی اسمارٹ فونز کے صارفین کی شکایات کے بعد اس معاملے کی تفصیلی تحقیقات کا حکم دیا۔اینڈروئیڈ ایک اوپن سورس، موبائل آپریٹنگ سسٹم ہے جو اسمارٹ فونز اور ٹیبلٹس کے اصل آلات بنانے والوں کے ذریعے قائم کیا گیا ہے۔

غیر منصفانہ کاروباری طریقوں کے الزامات دو معاہدوں سے متعلق ہیں یعنی موبائل ایپلیکیشن ڈسٹری بیوشن ایگریمنٹ اور اینٹی فریگمنٹیشن ۔ایگریمنٹ ریگولیٹر نے کہا کہ غیر منصفانہ تجارتی طریقوں کو روکنے کے لیے آرڈر جاری کرنے کے علاوہ ریگولیٹر نے کہا کہ گوگل کو اینڈرائیڈ موبائل ڈیوائس ایکو سسٹم میں متعدد مارکیٹوں میں اپنی غالب پوزیشن کا غلط استعمال کرنے پر 1,337.76 کروڑ روپے کا جرمانہ کیا گیا ہے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button