عجیب و غریب

کیمرے پر کرنی سینا کے لیڈر کا چاقو گود کر قتل

بھوپال ، 4ستمبر (ہندوستان اردو ٹائمز) دائیں بازو کے گروپ کرنی سینا کے ایک 28 سالہ رکن کو مدھیہ پردیش کے ایک شہر میں جمعہ کی رات مبینہ طور پر پرانے تنازعہ پر سرعام چاقو کے وار کر کے قتل کر دیا گیا۔ اٹارسی میں کرنی سینا کے ٹاؤن سکریٹری روہت سنگھ راجپوت کو میونسپلٹی کے دفتر کے سامنے تین افراد نے چاقو کے وار کر دیا۔ اس کے دوست سچن پٹیل کو بھی چھرا مارا گیا جب اس نے اسے بچانے کی کوشش کی۔ انہیں ایک نجی اسپتال لے جایا گیا، جہاں راجپوت کو مردہ قرار دے دیا گیا، جبکہ پٹیل کی حالت نازک ہے۔

روہت سنگھ راجپوت کو پرانے تنازعہ پر قتل کیا گیا، اٹارسی تھانے کے انچارج آر ایس چوہان نے بتایا کہ قتل کا مرکزی ملزم 27 سالہ رانو عرف راہل ہے۔ متاثرہ اور اس کا دوست مین بازار کے علاقے میں چائے کی دکان کے قریب کھڑے تھے کہ موٹرسائیکلوں پر سوار تین افراد ان کے قریب آئے جس سے لڑائی ہو گئی۔ جھگڑے کے دوران ان میں سے ایک نے اچانک چاقو نکالا اور مسٹر راجپوت پر بار بار وار کیا تینوں ملزمین راہول راجپوت، انکیت بھٹ اور ایشو مالویہ کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا گیا۔سب ڈویڑنل مجسٹریٹ مدن رگھوونشی، سب ڈویڑنل پولیس آفیسر مہیندر چوہان اور دیگر عہدیداروں کی موجودگی میں ایک ملزم انکیت بھٹ کے گھر کو تجاوزات کا حوالہ دیتے ہوئے منہدم کر دیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دیگر دو ملزمان کے گھر بھی مسمار کیے جائیں گے۔ پانچ دن پہلے اسی علاقے میں ابھیشیک مالویہ نام کے ایک بینک ملازم کو مجرموں نے پیٹا تھا۔ سابق اسپیکر اور مقامی بی جے پی ایم ایل اے ڈاکٹر سیتاشرن شرما اسی رات پولیس اسٹیشن پہنچے تھے اور شہر میں جرائم کے بڑھتے ہوئے واقعات پر اپنی ناراضگی ظاہر کی تھی۔ محکمہ بجلی کے افسران پر بدتمیزی کا الزام لگاتے ہوئے مسٹر شرما نے حال ہی میں شہر میں اپنے حامیوں کے ساتھ احتجاج بھی کیا تھا۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button