کھیل

کپل دیو وراٹ کے ٹی 20 میںکپتانی چھوڑنے کے فیصلے سے خوش نہیں ، کہا- کوہلی کو بی سی سی آئی سے مشورہ کرنا چاہیے تھا

نئی دہلی،18؍ ستمبر (ہندوستان اردو ٹائمز) کپل دیو نے کہا کہ وراٹ کوہلی کو ٹی 20 ورلڈ کپ کے بعد ٹی 20 انٹرنیشنل میں کپتانی چھوڑنے کا فیصلہ کرنے سے قبل بورڈ ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) اور سلیکٹرز سے بات کرنی چاہیے تھی۔ واضح رہے کہ کوہلی نے یہ فیصلہ کام کے بوجھ کو کم کرنے کے لیے کیا ہے، جو ان پر گزشتہ پانچ چھ سالوں سے تھا۔1983 کے ورلڈ کپ کی فاتح ٹیم کے کپتان کپل نے کہاکہ یہ ان دنوں کرکٹرز کو اپنے طور پر فیصلے کرتے ہوئے دیکھ کر قدرے حیرانی ہوتی ہے۔ میرے خیال میں کسی کھلاڑی کو فیصلہ لینے سے پہلے سلیکٹرز اور بورڈ سے مشورہ کرنا چاہیے۔ کپل دیونے کہا کہ ہر ایک کو کوہلی کی ایمانداری کا مکمل احترام کرنا چاہیے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ یہ سمجھنے میں ناکام رہے کہ کوہلی نے بورڈ سے مشورہ کیوں نہیں کیا۔

کپل نے کہاکہ میرے خیال میں ہمیں کوہلی کی اس ایمانداری کا احترام کرنا چاہیے کہ وہ اب کپتان نہیں بننا چاہتا۔ مہندر سنگھ دھونی نے بھی ایسا ہی کیا تھا۔ کوہلی نے بتایا کہ وہ اس سال اکتوبر نومبر میں منعقد ہونے والے ٹی 20 ورلڈ کپ کے بعد ٹی 20 کپتانی کے عہدے سے سبکدوش ہو جائیں گے۔ کوہلی نے اپنی پوسٹ میں لکھاکہ میں اپنے آپ کو خوش قسمت سمجھتا ہوں کہ مجھے نہ صرف ہندوستان کی نمائندگی کرنے کا موقع ملا بلکہ ہندوستانی کرکٹ ٹیم کی قیادت کرنے کا بھی موقع ملا۔ میں ایک ٹیم کا کھلاڑی، سپورٹ اسٹاف، سلیکشن کمیٹی، کوچ اور ہر ہندوستانی کا شکریہ ادا کرناچاہتا ہوں۔ وہ لوگ جو ہماری فتح کے لیے دعا کرتے ہیں، جنہوں نے بطور کپتان میرے سفر میں میرا ساتھ دیا۔ان کو میں شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close