عجیب و غریب

’کورونا پھیلانے‘ پر ایک شخص کو پانچ سال قید

لندن،7ستمبر (ہندوستان اردو ٹائمز) ویتنام میں ایک شخص کو کورونا وائرس پھیلانے پر پانچ سال کی قید سنائی گئی ہے۔ خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق لی وان ٹری نامی شخص نے گھر میں قرنطینہ کرنے کے قانون کی خلاف ورزی کی جس کے بعد انہیں ’لوگوں میں خطرناک بیماریاں‘ پھیلانے پر سزا سنائی گئی ہے۔

ویتنام میں صوبائی پیپلز کورٹ کی ویب سائٹ پر موجود رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مذکورہ شخص ملک میں کورونا وائرس کے گڑھ ہو چی من سٹی سے اپنے آبائی صوبے کا ماؤ گیا، جس کی وجہ سے وہ کورونا وائرس مزید پھیلنے کی وجہ بنا۔کا ماؤ میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد ہو چی من سٹی کے مقابلے میں کم ہے اور صوبے میں 21 دن تک گھر میں قرنطینہ کرنا لازمی قرار دیا گیا ہے۔ تاہم 28 سالہ مذکورہ شخص نے اس قانون کی خلاف ورزی کی۔لی وان ٹری میں کورونا وائرس کی تصدیق 7 جولائی کو ہوئی۔ عدالتی رپورٹ کے مطابق ’ٹری نے گھر میں قرنطینہ کرنے کے طبی قانون کی خلاف ورزی کی جس کی وجہ سے کئی لوگ کورونا وائرس سے متاثر ہوئے اور 7 اگست 2021 کو ایک شخص کا انتقال بھی ہوا۔

سرکاری میڈیا کے مطابق ٹری کی وجہ سے آٹھ لوگ کورونا وائرس سے متاثر ہوئے۔ویتنام میں گذشتہ سال کورونا وائرس کی کیسز کی تعداد کم تھی، تاہم ملک میں اب اس وبا کے پھیلاؤ میں اضافہ ہو گیا ہے۔ ویتنام میں اب تک پانچ لاکھ 40 ہزار افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں جبکہ ہلاکتوں کی تعداد 13 ہزار ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close