دیوبند

کمزور طبقات مفت تعلیم کے حق سے محروم نہیں کیا جاسکتا ، سماجوادی پارٹی چھا تر سبھا نے گورنر کو بھیجا میمورنڈم

دیوبند،16ستمبر(رضوان سلمانی ) سماجوادی پارٹی کے اسٹو ڈینٹ ونگ( چھا تر سبھا )نے یو پی کی گورنر صاحبہ کے نام میمو رنڈم میں دلت اور کمزور طبقات کوصفر فیس پر تعلیم کی سہو لیت ختم کئے جا نے کو دلت اور کمزو ر طبقات کے حقوق پر حملہ قرار دیا ہے اور کہا ہیکہ کورو نا کے سبب دلت اور کمزور طبقات کی معاشی حالت پہلے ہی بدتر ہے، زیرو فیس کی سہو لیت ختم کرنے سے ان طبقات کے بچے تعلیم سے بھی محروم ہو جا ئیں گے ۔میمو رنڈم میں دیگر پسماندہ طبقات اور اقلیتوں کے طلبہ کے تعلیمی وظائف روکے جانے پر بھی چھاتر سبھا نے شدید ناراضگی ظاہر کی ہے اور کہا کہ اس سے ان طبقات کے طلبہ تعلیم چھوڑنے پر خود کو مجبور پارہے ہیں۔

چھاتر سبھا نے دلت اور کمزور طبقات کے طلبہ کی زیرو فیس پر تعلیمی سلسلہ بحال کرنے اور دیگر پسماندہ طبقات اور اقلیتی فرقہ کے طلبہ کے تعلیمی وظائف پر لگی پابندی ہٹا ئے جا نے کا گورنر سے مطالبہ کیا ہے اور وارننگ دی ہیکہ اگر یہ مطالبات تسلیم نہیں کئے گئے تو سماجوادی چھاتر سبھا پورے اتر پردیش میں تحریک چلا نے پر مجبور ہو گی ۔چھاتر سبھا نے ڈی ایم کے توسط سے ارسال کئے جا نے والے اس میمو رینڈم کو سٹی مجسٹریٹ سریش کمار سونو کو سو نپا ہے ۔اس موقع پر چھاتر سبھا کے ضلع صدر واصل تو مر کے علاوہ صوبائی سیکریٹری فہد سلیم ،جنرل سیکریٹری شو پر ساد،وشواجیت گوجر، شاہ رخ عبّاس ،توندر سنگھ۔ پنکج عمری وغیرہ موجود تھے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close