دہلی

کل ہوگی آل پارٹی میٹنگ،مودی بھی کریں گے شرکت

نئی دہلی ، 16 جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) پارلیمانی امور کے وزیر پرہلاد جوشی نے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس سے پہلے پارلیمانی آل پارٹی میٹنگ بلائی ہے۔ یہ میٹنگ 17 جولائی 2022 کو دن میں گیارہ بجے ہوگی۔اس میں دونوں ایوانوں کی تمام سیاسی جماعتوں کو مدعو کیا گیا ہے۔حکومت کی جانب سے پارلیمانی امور کے وزیر پرہلاد جوشی نے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس سے ایک دن قبل اتوار 17 جولائی کوآل پارٹی میٹنگ بلائی ہے۔

اس میٹنگ کے لیے پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں (لوک سبھا اور راجیہ سبھا) میں تمام سیاسی جماعتوں کے ایوانوں کے قائدین کو مدعو کیا گیا ہے۔اس میٹنگ میں وزیر اعظم نریندر مودی بھی شرکت کر سکتے ہیں۔ اس آل پارٹی میٹنگ میں مودی کے علاوہ وزیر داخلہ امت شاہ، وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ اور پارلیمانی امور کے وزیر پرہلاد جوشی کے ساتھ ساتھ حکومت کے کئی دیگر وزرا بھی شرکت کر سکتے ہیں۔اس آل پارٹی میٹنگ میں حکومت تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ پارلیمنٹ کے ایجنڈے پر اتفاق کرنے کی کوشش کرے گی تاکہ پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کا کام کاج آسانی سے چل سکے۔

پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس 18 جولائی سے شروع ہو رہا ہے اور 12 اگست تک جاری رہے گا۔ پارلیمنٹ کا یہ اجلاس کئی لحاظ سے بہت اہم ہونے والا ہے کیونکہ اس سیشن کے دوران صدر اور نائب صدر کے عہدہ کے لیے بھی انتخابات ہونے ہیں۔پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کے پہلے ہی دن 18 جولائی کو صدارتی انتخابات ہونے ہیں، جس کے نتائج کا اعلان 21 جولائی کو کیا جائے گا۔

ملک کے اگلے نائب صدر کے انتخاب کے لیے نامزدگی کا عمل بھی شروع ہو گیا ہے۔نائب صدر کے عہدے کے لیے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ 19 جولائی ہے اور اگر ایک سے زیادہ امیدوار میدان میں ہیں تو نائب صدر کے عہدے کے لیے انتخاب 6 اگست کو ہوگا۔جہاں صدر کے عہدے کے لیے این ڈی اے کی امیدوار دروپدی مرمو اور اپوزیشن کے امیدوار یشونت سنہا کے درمیان مقابلہ ہے، وہیں حکمراں جماعت اور اپوزیشن دونوں نے نائب صدر کے عہدے کے امیدوار کے حوالے سے ابھی تک اپنے کارڈ نہیں کھولے ہیں، لیکن ان دونوں انتخابات کا اثر اور ان کے نتائج پر نظر آئے گا۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button