دہلی

کاشی، متھرا تنازعہ کا فیصلہ عدالت کے ذریعہ ہوگا : بھاجپا صدرنڈا

نئی دہلی ، 31 مئی (ہندوستان اردو ٹائمز) بی جے پی نے پیر کو کاشی وشوناتھ مندر-گیان واپی مسجد تنازعہ پر اپنا پہلا آفیشیل بیان دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے مسائل کو آئین کے مطابق حل کیا جائے گا، اور عدالتوں کے ذریعہ فیصلہ کیا جائے گا۔ بی جے پی کے صدر جے پی نڈا نے کہا کہ پارٹی نے ہمیشہ ثقافتی ترقی کے بارے میں بات کی ہے اور وہ عدالت کے حکم پر مکمل طور پر عمل کرے گی۔

نریندر مودی حکومت کی آٹھویں سالگرہ کے موقع پر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے جے پی نڈا نے کہا کہ ہم ہمیشہ ثقافتی ترقی کی بات کرتے رہے ہیں۔ لیکن ان معاملات کو آئین اور عدالتوں کے فیصلوں کے مطابق نمٹایا جاتا ہے لہٰذا، عدالت اور آئین اس پر فیصلہ کرے گا اور بی جے پی اس کی پابندی کرے گی۔جون 1989 کی پالم پور قرارداد کے بعد بی جے پی نے رام جنم بھومی تحریک شروع کی۔ ایل کے اڈوانی نے اس بات کو یقینی بنانے کے لیے رتھ یاترا کا اعلان کیا تھا کہ بھگوان رام کی جائے پیدائش پر مندر تعمیر کیا جائے۔بتا دیں کہ پیر کو یوگی آدتیہ ناتھ نے بی جے پی کی ایک روزہ ریاستی ورکنگ کمیٹی کی میٹنگ میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔

اس دوران انہوں نے کہا کہ کاشی میں کاشی وشواناتھ دھام کے افتتاح کے بعد ہر روز ایک لاکھ عقیدت مند درشن کے لیے کاشی وشوناتھ دھام پہنچ رہے ہیں۔ایودھیا میں عظیم الشان رام مندر کے بعد متھرا، ورنداون، وندھیا واسینی دھام، نیمیش دھام جیسی تمام جگہیں نئی سج دھج کے ساتھ نظر آرہی ہیں اور ان حالات میں ہم سب کو ایک بار پھر آگے بڑھنا ہے۔پریس کانفرنس میں بی جے پی صدر جے پی نڈا نے کہا کہ بی جے پی ایک مضبوط ملک کی تعمیر میں سب کو ساتھ لے کر چلنے کے لیے تیار ہے۔

انہوں نے ان تجاویز کو مسترد کر دیا کہ عوام کا ایک حصہ (مسلمان) مودی حکومت میں خود کو الگ تھلگ محسوس کر رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ مودی حکومت ’سب کا ساتھ، سب کا وشواس، سب کا وشواس‘ کے اصول پر کام کرتی ہے۔ اتراکھنڈ حکومت کی جانب سے یکساں سول کوڈ نافذ کرنے پر، جے پی نڈا نے کہا، "یہ ٹھیک ہے۔ وہ (اتراکھنڈ) اس پر بات کر رہے ہیں۔ ہم کہتے رہے ہیں کہ سب کے ساتھ یکساں سلوک ہونا چاہیے۔ ہمارا وسیع فریم ورک سب کے لیے انصاف ہے اور کوئی خوشامد نہیں۔ یہ ہمارا بنیادی اصول ہے اور ہم اسی کے مطابق کام کر رہے ہیں۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button