چنئی

ڈی ایم کے چیف ایم کے اسٹالن کے داماد کے خلاف پورے دن آئی ٹی کا چھاپہ ، ملے صرف1.36 لاکھ

چنئی ؍ نئی دہلی،03؍ اپریل (آئی این ایس انڈیا) محکمہ انکم ٹیکس کی جانب سے جمعہ کے روز ڈی ایم کے چیف ایم کے اسٹالن کی بیٹی اور داماد کے خلاف چھاپے میں ٹیکس حکام کو صرف 1.36 لاکھ روپے کیش ملا۔ ذرائع نے ہفتے کو اس کی اطلاع دی ہے۔ ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ ریاست میں باقی چار مقامات پر جو چھاپے مارے گئے ان میں سے کہیں بھی کچھ اور ضبط نہیں کیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ جو نقدی بھی ضبط کی گئی تھی وہ واپس کردی گئی ہے۔ اہل خانہ نے یہ ثابت کرنے کے لئے حکام کو دستاویزات دکھائے کہ یہ رقم گھریلو اخراجات کے لئے رکھی گئی ہے۔ذرائع نے بتایا کہ یہ چھاپے جمعہ کی صبح آٹھ بجے سے شروع ہوا۔ اس کے لئے عہدیداروں کو پختہ خبرملی تھی کہ انتخابات سے قبل ووٹرز کو خوش کرنے کے لئے نقد رقم دی جارہی ہے۔ تاہم ڈی ایم کے نے ان چھاپوں اور الزامات کے وقت پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔ منگل کو تامل ناڈو میں ووٹنگ ہونی ہے۔ ایسی صورت میں اتحاد کی اہم پارٹی ڈی ایم کے نے الزام لگایا ہے کہ یہ چھاپے سیاست حوصلہ افزائی ہیں اور اس بات کی مثال ہے کہ مرکز کی بی جے پی اور ریاست کی اے اے اے ڈی ایم کے حکومت ایجنسیوں کا غلط استعمال کرتی ہیں۔ایم کے اسٹالن نے ناراضگی میںکہا کہ ‘6 اپریل کو عوام اس پر واضح فیصلہ دے گی۔ انہوں نے ایک ریلی میں چیلنج کیا کہ میں ایم کے اسٹالن ہوں۔ اس اسٹالن نے ایمرجنسی اور میسا قانون کا سامنا کیا ہے۔ میں ان آئی ٹی کے چھاپوںمجھے ڈر نہیں لگتا ہے۔ وزیر اعظم مودی کو معلوم ہونا چاہئے کہ ہم اے آئی اے ڈی ایم کے کے رہنما نہیں ہیں جو ان کی طرح ان کے سامنے سجدہ ریز ہو جاتے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close