پٹنہ

زمین سروے کے کام میں سرکاری ملازمین کا تعاون کریں : مولانا محمد شبلی القاسمی

ذاتی زمین کے سروے میں دلچسپی کے ساتھ مذہبی مقامات کا سروے بھی جوابدہی کے ساتھ کرائیں

پٹنہ یکم مارچ(آئی این ایس انڈیا) اس وقت بہار کے کئی اضلاع بیگو سرائے ، کھگڑیا ، لکھی سرائے جہان آباد، ارول، شیو ہر، کشن گنج، ارریہ، کٹیہار، پورنیہ ، سیتا مڑھی ، سوپول، سہرسہ ، مدھے پورہ، مغربی چمپارن، بانکا، جموئی، شیخ پورہ، مونگیر، نالندہ اور بانکامیں زمین کے سروے کا کام چل رہا ہے ، سرکار نے اپنے کئی نوٹی فکیشن کے ذریعہ لوگوں کی اس طرف توجہ دلائی ہے کہ سروے کے کام میں دلچسپی لیں اور اپنی اپنی جائداد کا سروے سرکار کے ذریعہ متعین علاقائی ملازمین (کرمچاری) کے ذریعہ ضرور کرائیں ۔ امارت شرعیہ بھی لوگوں سے اپیل کرتی ہے کہ وہ اس اہم کام پر فوری توجہ دیں اورجہاں سروے کا کام ہو رہا ہے وہاں اپنی اپنی زمینوں کے سروے کا کام کرائیں اور اس کام میں سرکاری ملازمین کا تعاون کریں ۔یہ باتیں امارت شرعیہ کے قائم مقام ناظم مولانا محمد شبلی القاسمی صاحب نے اپنے ایک بیان میں کہیں۔مولانا موصوف نے کہا کہ جس طرح سے لوگ اپنی ذاتی زمین پر توجہ دیتے ہیں اور ساتھ لگ کر سروے کراتے ہیں ، اسی طرح مسلمانوں کی عام جائداد اور مذہبی مقامات مثلا مسجد ، قبرستان، خانقاہ، مزار، امام بارہ ، مدرسہ اور دیگر مذہبی مقامات کی زمینوں کا بھی پوری دلچسپی اور توجہ سے سروے کرانا چاہئے۔عام طور پر سننے میں آرہا ہے کہ ذاتی زمینوں سے تو دلچسپی ہو تی ہے ، لیکن قومی امانت اور مذہبی مقامات کے سروے سے متولیان کو اس قدر دلچسپی نہیں ہوتی ہے ۔ اگر اس عدم دلچسپی کی وجہ سے مسجد ، قبرستان، مزار، امام باروں، خانقاہوں یا مدرسوں کی زمین سرکار کے سروے کے دوران سرکاری سروے میں اپنے اصل نام سے درج نہیں ہو پائے گی تو مستقبل میں اس کی وجہ سے کئی طرح کی پریشانی ہو سکتی ہے ۔ اس لیے ا س کا م کو ضروری اور اپنی ذمہ داری سمجھ کر ضرور انجام دیں ۔جناب قائم مقام ناظم صاحب نے امارت شرعیہ کے ذیلی دفاتر کے ذمہ دار وں ، قضاۃ ، نقباء، نائبین نقباء اور ضلع و بلاک سطح کے ذمہ داروں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے اپنے علاقہ کی مسجدوں قبرستانوں اور دیگر مذہبی وقومی مقامات کی زمینوں کا سروے کرائیں ، زمینوں کو صحیح ناموں، کھاتا خسرہ ، توضیع ، رقبہ اور چوحدی وغیرہ کی پوری تفصیل کے ساتھ سرکار کے رجسٹر میں درج کرائیںاور سرکاری کرمچاریوں کاسروے کے کام میں تعاون کریں۔خانہ پری کے وقت زمین کے مالکان یا متولیوں کو خود زمین پر موجود رہنا چاہئے ، زمین کی حد بندی ، میڑ و غیرہ ٹھیک کردیں ، جہاں تک زمین ہے اس کی صحیح نشاندہی کریں، ضرورت پڑنے پر چوحدی بتائیں اور خود جا کر کرمچاری کو چوحدی دکھا دیں ، مطلوبہ کاغذات مثلاً جمع بندی، مالگزاری کی رسید ، کھتیان کی نقل وغیرہ تیار رکھیں او ر مانگنے پر اس کی عکسی کاپی دیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close