پٹنہ

کورونا پر قابو پانے میں بہار حکومت کی ناکامی کا پردہ فاش کرنے پر ہوئی ہے پپو یادو کی گرفتاری۔ ایس ڈی پی آئی

پٹنہ۔(پریس ریلیز)۔ سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) بہار کے ریاستی صدر نسیم اختر نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں کہا ہے کہ بہار حکومت کورونا پر قابو پانے اور اس کا صحیح طریقہ سے علاج مہیا کرانے میں مکمل طور پر ناکام ثابت ہوئی ہے تو وہیں بہار میں لگایا گیا لاک ڈاؤن بھی مکمل طور پر اسی طرح غیر منصوبہ بند ثابت ہوا ہے جس طرح گزشتہ سال مرکزی حکومت کا لاک ڈاؤن ثابت ہوا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ سرکار کے ساتھ ہی اپوزیشن میں موجود تمام سیاسی پارٹیاں بھی ایر کنڈیشن کمروں میں بند ہیں ایسے میں ایس ڈی پی آئی اور پپو یادو اور ان کی پارٹی کے کارکنان بہار کے عوام کیلئے محسن بن کر سامنے آئے ہیں۔ جو عوام کو علاج و معالجہ اور کھانے سے لیکر مرنے والوں کے تجہیز و تکفین تک کے تمام تر سہولیات اور خدمات انجام دے رہے ہیں اور پروگریسیو ڈیموکریٹک الائنس کے لیڈر پپو یادو لگاتار اسپتالوں میں جاکر کورونا کے مریضوں کی مدد کے ساتھ بہار کے خراب ہیلتھ کیئر سسٹم کا پردہ فاش کر رہے ہیں۔ انہوں نے گزشتہ دنوں بھاجپا ممبر پارلیمنٹ راجیو پرتاب پر روڑھی گاؤں میں سو سے زائد ایمبولنس چھپا کر رکھنے کا بھی چھاپہ مار کر پردہ فاش کیا تھا اور وہیں بہار میں لاشوں کے چھپائے جارہے ڈاٹا کو سامنے لانے کا بھی کام کیا تھا۔ ایس ڈی پی آئی ریاستی صدر نسیم اختر نے کہا انہیں وجوہات کی بنا پر لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کا الزام لگاکر پپو یادو جی کو گرفتار کیا گیا ہے جوکہ قابل مذمت اور ایک ذمہ دار شہری کو اپنی ذمہ داری کو نبھانے سے روکنے کی کوشش ہے۔ایس ڈی پی آئی ریاستی صدر نسیم اختر نے حکومت بہار سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پپو یادو جی کو فوری رہا کرے اور حکومت کے خلا ف اٹھنے والی آوازوں کو دبانے کے بجائے تمل ناڈو اور کیرلا جیسے غیر بی جے پی ریاستوں میں کی طرح ریاست بہار میں بھی کورونا متاثرین کے علاج و معالجہ کا فوری انتظام کرے۔ ایس ڈی پی آئی کے صدر نے بتایا کہ پپو یادو جی کی رہائی کی مانگ کو لیکر پارٹی کے کارکنوں نے ریاست بھر میں احتجاج کیا

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close