پٹنہ

بہارحکومت کو’آخر ی وارننگ‘دینے والی ’بنچ‘ کوہی تبدیل کردیاگیا ، پٹنہ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس سمیت دو جج سماعت کریں گے

پٹنہ6مئی(ہندوستان اردو ٹائمز) چیف جسٹس سنجے کرول خود بہار میں کورونا کی وبا کو کنٹرول کرنے کے لیے حکومت کی مبینہ کوششوں سے متعلق دائر پی آئی ایل کی سماعت کریں گے۔ اس کا نوٹیفکیشن چیف جسٹس کے حکم سے جاری کیا گیا ہے۔ چیف جسٹس سنجے کرول اور جسٹس ایس کمارکی بنچ کے ذریعہ ان مقدمات میں دائر تینوں عوامی اپیل کی سماعت اب ہوگی۔ ابھی تک اس معاملے میں جسٹس چکردھاری شرن سنگھ اور جسٹس موہت کمار شاہ کی بنچ سماعت کررہی تھی۔دینک بھاسکرنے یہ تفصیل بتائی ہے۔اس نے لکھاہے کہ سماعت کے دوران بنچ نے کئی بار بہار حکومت پر تنقیدکی تھی ۔جس کے بعداب بنچ ہی بدل دی گئی ہے۔اس بنچ نے حکومت کی ناکامی کوعوام کے سامنے رکھ دیاتھا۔بہارمیں طبی نظام بری طرح بربادہے۔کوروناسے نمٹنے کاخاطرخواہ انتظام نہیں ہے۔پورے بہارمیں زبردست بے چینی اورسرکارکے تئیں زبردست غصہ ہے۔عدالتی پھٹکارکے بعدلگاتھاکہ سرکارجاگ جائے گی ۔عدالت کی سخت پھٹکاراورحتمی تاریخ کے بعدلاک ڈائون لگایاگیاہے لیکن اب بنچ بدل دی گئی ہے۔ نیز اسی مسئلے پر ایک نئی پی آئی ایل بھی دائر کی گئی۔ اس کے بعد چیف جسٹس نے کورونا سے متعلق تین مفاد عامہ کی درخواستوں کی سماعت کے لیے دو ججوں کی بنچ تشکیل دی ہے۔ کیونکہ اس وقت چیف جسٹس سنجے کرول خود کورونا انفیکشن ہوچکے تھے۔ انہیں علاج کے لیے پٹنہ ایمس میں داخل کیا گیا تھا۔ اب وہ مکمل صحت مند ہیں۔منگل 4 مئی کو سماعت کرتے ہوئے ، ہائی کورٹ نے بہار حکومت کو 48 گھنٹے کوآخری وارننگ دی تھی اور کہا تھا کہ آکسیجن بسترکے نظام کو بہتر بنایا جانا چاہیے۔ اگر ایسا نہیں ہوتا ہے تو عدالت کو فوج کو مدد مانگنے کی ہدایت کرنی ہوگی۔ اس دوران حکومت بہار کے وکیل نے بتایا تھا کہ بدھ سے ریاست میں لاک ڈاؤن نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ تاہم یہ اطلاع موصول ہونے کے باوجود عدالت نے حکومت کے رویے پرناراضگی کا اظہار کیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close