پٹنہ

پٹنہ : دنیا میں پہلی بارفوجی خدمات میں جنس ثالث ( خواجہ سرا) کیلئے ریزرویشن

پٹنہ،16؍جنوری ( آئی این ایس انڈیا ) صلاحیت اور استعداد کے دم پر جنس ثالث(زنخا، یا خواجہ سرا) بینکنگ سمیت متعدد شعبوں میں پہنچ چکے ہیں ، اب یہ جنس ثالث ( خواجہ سرا)وہ بہار پولیس کانسٹیبل اور اے ایس آئی کا عہدہ بھی حاصل کر سکیں گے اور دوسرے پولیس اہلکاروں کی طرح ترقی و مراعات کے حامل ہوں گے۔ محکمہ داخلہ نے بہار پولیس میں جنس ثالث (زنخا ، خواجہ سرا)امیدواروں کی تقرری کے لئے ایک نوٹس جاری کیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی صوبہ بہار دنیا کی پہلی ریاست بن گئی ہے ، جہاں سرکاری ملازمت میں، خاص طور پر سیکورٹی کے شعبہ میں جنس ثالث (زنخا خواجہ سرا ) کو ریزرویشن دیا ہے۔ اب خواجہ سرا پولیس انڈر انسپکٹر (اے ایس آئی) کے عہدوں پر براہ راست تقرری کے لئے درخواست میں استعمال کی جاسکتی ہے۔نوٹس میں ان کی تقرری سے متعلق ہر قسم کی تجاویز کی واضح کردی گئی ہے۔ اس کے مطابق معمول کے ساتھ جب بھی تقرری کے درخواست طلب کی جائے گی، ہر 500 آسامیوں پر 1 اسامی ان کے لئے مخصوص ہوگی اور اس کا ذکر اشتہار میں واضح طور پر کیا جائے گا۔ اگر ان سے درخواست موصول نہیں ہوئی تو یہ 1 عہدہ عام امیدواروں کے ذریعہ پر ہوگا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close