پٹنہ

روپیش سنگھ قتل کی ہوگی ایس آئی ٹی جانچ ، تیجسوی نے کہا – نتیش کمار سے بہار نہیں سنبھل رہا ہے ، استعفیٰ دیں

پٹنہ،13؍جنوری ( آئی این ایس انڈیا ) بہار کی دارالحکومت پٹنہ ایک بار پھر جرائم کی دارالحکومت بنتی جارہی ہے۔ گذشتہ شام پٹنہ ایئرپورٹ پر انڈیگو کے اسٹیشن منیجر روپش کمار سنگھ کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا ۔ بتایا جارہا ہے کہ موٹرسائیکل پر سوار مجرموں نے روپیش پر 6 راؤنڈ فائر کیا اور پھر اسلحہ لہراتے ہوئے فرار ہوگئے۔ اس معاملے کی تحقیقات کے لئے ایس آئی ٹی تشکیل دی گئی ہے۔وزیر اعلی نتیش کمار اس واقعے کے لئے ایک بار پھر حزب اختلاف کے نشانے پر آگئے ہیں۔ سابق ڈپٹی سی ایم اور آر جے ڈی رہنما تیجسوی یادو نے بدھ کو کہا کہ غیر اخلاقی اور غیر قانونی حکومت کی سرپرستی میں روزانہ ہونے والے جرائم اور بدانتظامی این ڈی اے کی اجتماعی ناکامی ہے۔سابق ڈپٹی سی ایم تیجسوی یادو نے کہاکہ نتیش جی کاجرائم کو چھپانا اور اس کو قبول نہ کرنے کی کوشش ہی سب سے بڑا جرم ہے ۔بہار ان سے نہیں سنبھل رہا رہے ، فورا استعفیٰ دیں۔اس سے قبل تیجسوی یادو نے کہا تھاکہ حکومت کی سرپرستی میں مجرموں نے پٹنہ میں ائیر پورٹ منیجر روپیش کمار سنگھ کو ان کی رہائش گاہ کے باہر گولی مار دی۔ وہ ملنسار اور مدد گار فکر کے مالک تھے۔ مجھے ان کی بے وقت موت سے گہرا رنج ہے۔ ان کی روح کو سکون ملے۔ اب بہار میں مجرم حکومت چلا رہے ہیں۔ انڈیگو کے اسٹیشن منیجر روپیش کمار سنگھ کی ہلاکت کے بعد بہار میں سیاسی سرگرمی تیز ہوگئی ہے۔ جہاں پپو یادو نے سی بی آئی انکوائری کا مطالبہ کیا ہے ، وہیں بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ وویک ٹھاکر نے اپنی ہی حکومت پر سوالات اٹھائے ہیں۔ وویک ٹھاکر نے کہا ہے کہ یا تو بہار حکومت 3 سے 5 دن کے اندر مجرموں کو پکڑ لے ورنہ معاملہ سی بی آئی کے حوالے کردے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close