پٹنہ

نتیش وزارت کی توسیع 14جنوری کے بعدمتوقع

پٹنہ6جنوری(آئی این ایس انڈیا) بہار کی سیاست میں بڑا سیاسی بھونچال آسکتا ہے۔کھرماس 14جنوری کو ختم ہوجائے گا اس کے بعد 15جنوری سے شبھ کام ہوںگے اسی درمیان نتیش وزارت کی دوسری توسیع ہوگی۔اسی درمیان کانگریس لیڈر بھرت سنگھ کا ایک سنسنی خیز بیان سامنے آیا ہے۔ کانگریس لیڈر بھرت سنگھ کاکہناہے کہ پارٹی کے 11 اراکین اسمبلی این ڈی اے میں شامل ہوسکتے ہیں۔ کانگریس پارٹی میں بڑے ٹوٹ کا دعویٰ کیا جارہا ہے۔ بھرت سنگھ کے مطابق، کانگریس قانون ساز اسمبلی کے لیڈر اجت شرما کو بھی ان 11 اراکین اسمبلی میں شامل بتایا۔ اتنا ہی نہیں دعویٰ کیا جارہا ہے کہ کانگریس کے ریاستی صدر مدن موہن جھا بھی پارٹی چھوڑنے والوں میں شامل ہیں۔کانگریس لیڈر بھرت سنگھ کا کہنا ہے کہ مدن موہن جھا اب اشوک چودھری کے راستے پر جارہے ہیں۔ انہوں نے الزام لگایاہے کہ کانگریس کے 11 اراکین اسمبلی نے پیسے دے کر ٹکٹ خریدے اور الیکشن میں جیت حاصل کی۔ ساتھ ہی دعویٰ کیاہے کہ یہ سبھی این ڈی اے میں جلد شامل ہوجائیں گے۔ بھرت سنگھ نے راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) سے کانگریس کو الگ ہونے کا بھی مشورہ دیا ہے۔ واضح رہے کہ اسمبلی انتخابات 2020 میں خراب کارکردگی کے بعد بہار کانگریس میں تنازعہ کی صورتحال ہے۔ پارٹی لیڈروں میں آپسی اختلافات کی باتیں مسلسل سامنے آرہی ہیں۔واضح رہے کہ کانگریس صدر سونیا گاندھی نے بہار انچارج شکتی سنگھ گوہل کے عہدہ چھوڑنے کی خواہش کو منظوری دے دی ہے۔ شکتی سنگھ گوہل کو بہار انچارج کی ذمہ داری سے آزاد کرتے ہوئے بھکت چرن داس کو یہ ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ واضح رہے کہ شکتی سنگھ گوہل نے پیر کو پارٹی قیادت سے انہیں بہار انچارج کی ذمہ داری سے آزاد کرنے اور کوئی ’ہلکی ذمہ داری’ دینے کی گزارش کی تھی۔ کانگریس کے تنظیمی جنرل سکریٹری کے سی وینو گوپال کی طرف سے جاری بیان کے مطابق، کانگریس صدر سونیا گاندھی نے راجیہ سبھا رکن پارلیمنٹ شکتی سنگھ گوہل کی خواہش کو منظور کرتے ہوئے انہیں بہار انچارج کی ذمہ داری سے آزاد کردیا ہے۔ ان کی جگہ اب یہ ذمہ داری بھکت چرن داس کو سونپی گئی ہے۔این ڈی اے کی اہم حلیف بی جے پی نے نتیش وزارت میں توسیع کیلئے اپنے امیدواروں کا نام طے کرلیا ہے۔ اس فہرست میں نوجوانوں کو اہمیت دی گئی ہے۔ انہیں وزارت میں شامل کیا جائے گا اور نند کشور یادو ،پریم کمار اس بار وزارت میں شامل نہیں ہوںگے۔ بی جے پی قیادت اپنی فہرست مرکزی قیادت کو بھیج چکی ہے وہاں سے مہر لگنے کے بعد فہرست وزیراعلی کے پاس بھیجے جائے گی اور پھر وزارت کی توسیع ہوگی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close