پٹنہ

امار ت شرعیہ بہار، اڈیشہ وجھارکھنڈ کا نظام بہت ہی منظم ومرتب ہے،اس کی اساس اخلاص اور انسانی خدمت پر ہے: امیر شریعت کرناٹک

پٹنہ23نومبر(آئی این ایس انڈیا)’امارت شرعیہ بہار،اڈیشہ و جھارکھنڈ میں خدمت دینے واے تمام علماء کرام ماہر فنون ہیں اور نہایت مخلص ہیں ، منتظمین بیدار مغز اور متحرک ہیں، مفکر اسلام حضرت مولانا سید محمد ولی
رحمانی صاحب جیسے جرأت مند ، دور اندیش اور صاحب بصیرت امیرشریعت کی قیادت اور رہنمائی اس ادارہ کو حاصل ہے۔جس کی وجہ سے یہاں کا سارا نظام اورہر چیز مرتب و منظم ہے، اس کا اہم شعبہ دار القضاء ہے یہاں کے تمام فیصلے اور انکی فائلیں اس طرح تریب سے رکھی ہوئی ہیں کہ سالہا سال کی فائل بھی بڑی آسانی سے نکال لی جا سکتی ہے، اللہ تعالیٰ اس ادارے کو بے انتہا قبول فرمائے اور مزید ترقیات سے نوازے۔ ‘‘ ان خیالات کا اظہار کرناٹک کے امیر شریعت ثالث ، جامعہ سبیل الرشاد بنگلور کے مہتمم و شیخ الحدیث مشہور عالم دین مولانا صغیر احمد خا ن رشادی صاحب نے امارت شرعیہ کے دفاتر او ر یہاں کے کاموں کو دیکھنے بعد کیا ۔ حضرت امیر شریعت کرناٹک علماء کرناٹک کے ایک وفد کے ساتھ امارت شرعیہ بہار، اڈیشہ و جھارکھنڈ کے نظام کارکے معاینہ کے لیے۲۲؍ نومبر۲۰۲۰ء؁ کو تشریف لائے تھے اور دو دنوں تک ، تمام دفاتر کامعاینہ کیا، خاص کر آپ نے یہاں کے دار القضاء ، دار الافتاء، بیت المال ، شعبہ تنظیم وتبلیغ المعہد العالی ، مولانا سجاد میموریل اسپتال کے کاموں کاکافی اشتیاق و دلچسپی سے مشاہدہ کیا، قضاۃ و علماء امارت شرعیہ سے ملاقات کی اور نظام کار کا تفصیلی جائزہ لیا۔جائزہ کے بعد انہوں نے کہا کہ’’ امار ت شرعیہ پٹنہ میں بغرض معاینہ و ملاقات احقر حاضر ہوا، دار القضاء، دار الافتاء اور ہاسپیٹل کا معائنہ کیا ، وہاں کے قاضیوں سے کچھ معلومات حاصل کی ،ما شاء اللہ طبیعت خوش ہو گئی ۔‘‘ امیر شریعت کرناٹک نے خواہش ظاہر کی کہ ریاست کرناٹک کی امارت شرعیہ کی آپ حضرات ہمیشہ سر پرستی فرماتے رہیں۔قائم مقام ناظم امارت شرعیہ مولانامحمد شبلی القاسمی صاحب ، نائب ناظم مولانا سہیل احمد ندوی ، مفتی امارت شرعیہ مولانا مفتی سعید الرحمن قاسمی اور معاون ناظم مولانا قمر انیس قاسمی صاحب نے مہمانان مکرم کے سامنیتفصیل کے ساتھ تمام شعبہ جات کا تعارف کرایااور امارت شرعیہ کے ذریعہ انجام پا رہے گوناگوں کاموں سے انہیں واقف کرایا۔ موخہ ۲۳؍ نومبر کو امارت شرعیہ کے ذمہ داران و کارکنان کی مہمان علماء کرام کے ساتھ ایک دعائیہ نشست بھی ہوئی ۔ اس نشست میں اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے امیر شریعت کرناٹک مد ظلہ نے امارت شرعیہ پھلواری شریف پٹنہ کے کارکنان وذمہ داران کا شکریہ ادا کیا اور فرمایا کہ آپ حضرات نے بہت اچھی طرح ہم لوگوں کا اکرام کیاا ور ہماری خدمت کی ،آپ حضرات خدمت خلق کا بہت کام انجام دے رہے ہیں ۔ انہوں نے فرمایا کہ امارت شرعیہ بہار ، اڈیشہ و جھارکھنڈ سے انسانیت کی خدمت کابڑا کام انجام پا رہا ہے ، یہاں کے تمام شعبے خدمت کے جذبے سے کام کر رہے ہیں ، اللہ تعالیٰ اس کوقبول فرمائے ، انہوںنے اخلاص کے ساتھ خدمت دین کی نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ہے کہ پوری مخلوق اللہ کا کنبہ ہے ، اور اللہ کے نزدیک سب سے پسندیدہ شخص وہ ہے جو اللہ کے کنبہ کو سب سے زیادہ فائدہ پہونچائے، آپ حضرات اللہ کے کنبے کو فائدہ پہونچانے میں لگے ہیں ، یقینا اللہ تعالیٰ کی پسندیدگی اور رضامندی آپ حضرات کو حاصل ہو گی ۔انہوں نے کہا کہ مفکر اسلام حضرت مولانا سید محمد ولی رحمانی صاحب امیر شریعت بہار اڈیشہ وجھارکھنڈ کی ذات ملت اسلامیہ کے لیے نعمت عظمیٰ ہے ، ہمیں ان کی صحت ودرازیٔ عمر کی ہمیشہ دعا کرنی چاہئے کہ اللہ تعالیٰ ہمیںحضر ت امیر شریعت مد ظلہ کی سر پرستی و نگرانی سے فیض حاصل کرنے کا موقع دیتا رہے ۔امیر شریعت کرناٹک کے ساتھ تشریف لائے علماء کرام کے وفد میںمولانا طاہر رشادی صاحب استاذ سبیل الرشادبنگلور،مولانا افتخار صاحب استاذ سبیل الرشاد بنگلور، مولانا جواد صاحب استاذ سبیل الرشاد بنگلوراور بنگلور کے ایک تاجر و عالم دین مولانا نعمت اللہ صاحب شریک تھے ۔ دعائیہ نشست میں بڑی تعداد میں امارت شرعیہ کے کارکنا ن و و ذمہ داران شریک ہوئے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close