پٹنہ

شتروگھن سنہا کے فرزندبانکی پورسے کانگریس کے امیدوار

پٹنہ 15اکتوبر(آئی این ایس انڈیا) بہاری بابوشتروگھن سنہاجوفلم ادارکارسے لیڈر بنے ہیں ، نے اپنے بیٹے لوسنہاکوسیاسی پچ پرکھڑاکرنے کافیصلہ کیاہے۔بہاراسمبلی انتخابات میں لوسنہا پٹنہ کی بانکی پور سیٹ سے کانگریس کے امیدوار کی حیثیت سے اپنی قسمت آزمائیں گے۔ بانکی پور سیٹ کا مقابلہ کافی دلچسپ لگتا ہے ، یہاں لوسنہا کے علاوہ ،پلورلس رٹی کی پشپال پریا اور بی جے پی کے تین بارکے ایم ایل اے نتن نوین بھی انتخابی میدان میں ہیں۔ شتروگھن سنہا مسلسل دو بارالیکشن جیت کر پٹنہ صاحب پارلیمانی نشست سے پارلیمنٹ پہنچے ہیں ، لیکن دونوں بار انہوں نے بی جے پی کے ٹکٹ پر انتخابات میں کامیابی حاصل کی۔کایستھ ووٹوں کی وجہ سے شتروگھن نے اس نشست کو اپنی روایتی نشست بنایا۔ تاہم 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں انھیں کانگریس کے ٹکٹ پر میدان میں اتاراگیا ، بی جے پی نے اپنے دوسرے کایستھ لیڈر روی شنکر پرساد کوٹکٹ دے کر شتروگھن کوشکست دیاہے۔شتروگھن سنہا نے اپنی سیاسی میراث اپنے بیٹے لیوسنہا کے حوالے کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور انہیں بانکی پوراسمبلی سیٹ سے کھڑا کررہے ہیں جو ان کی پرانی پارلیمانی نشست کے تحت آتی ہے۔ اس نشست پر کایستھ کاتسلط خیال کیاجاتا ہے ، لیکن یادو ،مسلم اوردلت ووٹرز کافی اہم ہیں۔ گذشتہ تین دہائیوں سے کایستھ برادری سے تعلق رکھنے والے نتن نوین کا انتخاب کیا جارہا ہے جبکہ اس سے قبل ان کے والد نوین کشور سنہا یہاں نمائندگی کر چکے ہیں۔بانکی پور سیٹ پر کایستھ ووٹ کی وجہ سے ، کانگریس کے ٹکٹ پر لوسنہاکامقابلہ یہاں کافی دلچسپ ہوسکتا ہے۔ لیو سنہا کانگریس کے ٹکٹ سے انتخابی میدان میں آکر گرینڈ الائنس کی حمایت بھی حاصل کرسکتے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close