پٹنہ

مکیش ساہنی مجھے دو کروڑ میں ٹکٹ بیچ رہے تھے : سابق ممبر اسمبلی

پٹنہ ،۱۴؍اکتوبر(آئی این ایس انڈیا) وی آئی پی کے صدر مکیش ساہنی ، جو این ڈی اے میں مہا گٹھ بندھن سے ترک تعلق کرکے آئے ہیں ، پر بی جے پی کے سابق ایم ایل اے ترکیشور سنگھ نے بنیا پور سے 2 کروڑ میں ٹکٹ فروخت کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔ تارکیشور کے مطابق بی جے پی نے ان کا ٹکٹ کاٹا اور سیٹ وی آئی پی کو دی اور مکیش ساہنی سے ملنے کو کہا۔ جب ہم ملنے گئے تو ہم نے دو کروڑ روپے طلب کیے گئے۔ وی آئی پی نے اس ساری تفصیل کی تردید کی ہے ۔وی آئی پی کے مطابق تارکیشور ان سے کبھی نہیں ملاقات نہیں کی ۔ بی جے پی سے ناراضگی اور وی آئی پی پر اس الزام کے بعد تاراکیشور سنگھ نے لوک جن شکتی پارٹی (ایل جے پی) میں شمولیت اختیار کرلی ہے ۔2015 کے انتخابات میں بی جے پی امیدوار تاراکیشور سنگھ 56 ہزار ووٹ حاصل کر بھی ہار گئے تھے۔ اس بار انتخابی گونج شروع ہوئی ، تو وہ بی جے پی کے بڑے قائدین کے پاس گئے۔ تارکیشور سنگھ کے مطابق بڑے قائدین کی رضامندی سے انہوں نے بنیا پور اسمبلی سے انتخابات کی تیاری شروع کردی، لیکن آخری وقت پر بنیا پور اسمبلی سیٹ وی آئی پی کو دے دی گئی۔ پھر یہ فیصلہ کیا گیا کہ ترکیشور سنگھ وی آئی پی سے انتخاب لڑ رہے ہیں اور ان سے وی آئی پی کے قومی صدر مکیش ساہنی سے ملاقات کرنے کو کہا گیا ہے۔ تارکیشور کہتے ہیں ، جب میں مکیش ساہنی سے ملنے گیا تو ساہنی نے مجھ سے رقم کا مطالبہ کیا۔ وہ بھی ایک سے دو کروڑ، میں اس طرح کا کام نہیں کرسکتا تھا ،لہٰذا واپس آگیا۔ اب میں نے ایل جے پی سے ٹکٹ لیکر بنیا پور سے انتخاب لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان کے مطابق ایسی کیفیت میں انہوں نے اپنے قومی ترجمان راجیو مشرا سے بات کی۔انہوں نے اس سارے معاملہ کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ ایسی کوئی بات نہیں کئی گئی ہے۔ کسی طرح سے تارکیشور سنگھ سے رابطہ نہیں ہے۔ راجیو مشرا نے کہا کہ تاراکیشور سنگھ مکیش ساہنی سے کبھی نہیں ملے ہیں۔ تارکیشور سنگھ ٹکٹ نہ ملنے پر مایوس ہیں ، لہٰذا وہ لغو الزاما ت عائد کرر ہے ہیں ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close