پٹنہ

جدیواوربی جے پی کے ساتھ آرجے ڈی نے بھی 17جیتے ممبران کے ٹکٹ کاٹے

پٹنہ 13اکتوبر(آئی این ایس انڈیا) بہاراسمبلی انتخابات میں حکمران جماعت سے زیادہ ، اپوزیشن آر جے ڈی اپنے ایم ایل اے کے خلاف عوامی ناراضگی سے خوفزدہ ہے۔ یہی وجہ ہے کہ آر جے ڈی نے ریاست میں اقتدار رکھنے والی بی جے پی-جے ڈی یوسے زیادہ اپنے سیٹنگ ایم ایل اے کے ٹکٹوں کوکاٹاہے۔ آر جے ڈی نے کل 17 سیٹنگ ایم ایل اے کے ٹکٹ کاٹے ہیں۔ ان میں سے چھ نشستیں سیٹ شیئرنگ میں اتحادیوں کے پاس چلی گئی ہیں ، جبکہ باقی 11 نشستیں ارکان اسمبلی کے ٹکٹ کاٹ کر میدان میں اتاری گئیں ہیں۔ آر جے ڈی نے اپنے 11 ممبران اسمبلی کے ٹکٹ کاٹ کر ایک نیا چہرہ کھڑا کیا ہے۔ ان میں گوریاکوٹھی سیٹ سے ستیادیوپرساد سنگھ ، ترائیہ سے مدرکا رائے ، گڑکھا سے منیشور چودھری ، سمری بختیار پور سے ارون یادو ، مخدوم پور سے صوبیدارداس ، کیساریہ سے ڈاکٹر راجیش کمار ، بارؤلی سے راجندر کمار ، ہرشھی سے راجیندر کمار شامل ہیں۔ اس کے علاوہ اوبراسیٹ سے بجیندر پرساد اور اروال کی نشست سے رویندر سنگھ کاٹ چکے ہیں۔آر جے ڈی نے ابھی تک اس وقت اپنے 17 سیٹنگ ایم ایل اے کو ٹکٹ نہیں دیا ہے۔ ان میں چھے اراکین اسمبلی کے ٹکٹ جن کی سیٹیں گرینڈ الائنس میں بائیں بازوکی جماعتوں کو دی گئی ہیں۔آر جے ڈی نے اپنے پانچ سیٹنگ ایم ایل اے کی سیٹیں تبدیل کردی ہیں ، جس میں سابق وزیرتیج پرتاپ یادو کو مہوا کی بجائے حسن پور منتقل کردیا گیا ہے۔ بھولا یادو کو بہادر پور سے ہٹایا گیا اور حیاگھاٹ سیٹ سے امیدواربنایا۔ سابق وزیر شیو چندر رام کو راجا پاکر سے ہٹا کر پاٹ پور سیٹ سے میدان میں اتارا گیا ہے۔ یدوونش یادو کو پپراسیٹ کی بجائے نرمالی سیٹ دی گئی ہے۔ ممکن ہے کہ عبدالباری صدیقی کوکیوٹی سے ہٹا دیا جائے۔این ڈی اے کی سیٹ شیئرنگ کی وجہ سے جے ڈی یو کو اپنے 10 سیٹنگ ایم ایل اے کے ٹکٹوں کو کاٹنا پڑا ، کیونکہ انہیں اتحادیوں کو نشستیں دیناتھیں۔کپل دیو کامت ، گلزار دیوی ، سنیل کمار چودھری ،رمیش سنگھ کشواہا ،سبودھ رائے ،جناردن مانجھی، روی جیوتی کمار،منورجن سنگھ عرف دھومل سنگھ سے ٹکٹ کاٹے گئے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close