پٹنہ

بہار اسمبلی انتخابات: پرشانت کشور اور بی جے پی کی رسہ کشی کے درمیان ایل جے پی نے شروع کی انتخابی تیاری

پٹنہ۔۳؍جنوری: بہار اسمبلی انتخابات میں گرچہ ابھی آٹھ نو ماہ کا وقت ہے۔لیکن ریاست میں سیاست کافی گرم ہوگئی ہے۔ ان بات چیت کو منظر عام پر لایا جارہا ہے جے ڈی یو کے قومی نائب صدر پرشانت کشور کے اس بیان نے جس میں وہ این ڈی اے میں سیٹ شیئرنگ کی بات کر رہے ہیں۔اب خبر ہے کہ ایل جے پی نے بھی ریاست میں انتخابی تیاری شروع کر دی ہے۔2015 کے اسمبلی انتخابات میں پارٹی کو 42 سیٹیں ملی تھیں۔تب پارٹی کے ساتھ این ڈی اے میں بی جے پی کے علاوہ اوپیندر کشواہا کی آر ایل ایس پی اور جیتن مانجھی کی ہم پارٹی شامل تھی۔ان بات چیت کا آغاز جے ڈی یو کے نائب صدر پرشانت کشور کے سیٹ تقسیم کے فارمولے سے ہوئی۔پرشانت کشور کے بیان کے بعد ان کے اور بہار کے نائب وزیر اعلی اور بی جے پی لیڈر سشیل مودی کے درمیان براہ راست زبانی جنگ شروع ہو گئی۔اس دوران بہار میں این ڈی اے کی تیسری حلیف پارٹی ایل جے پی نے بھی اپنی تیاری شروع کر دی ہے۔پارٹی ذرائع کے مطابق پارٹی نے ریاست کی 119 سیٹوں پر اپنی تیاری شروع کر دی ہے۔پارٹی ذرائع نے بتایا کہ یہ تمام وہ سیٹیں ہیں جس پر 2015 کے اسمبلی انتخابات میں جے ڈی یو یا بی جے پی کو کامیابی حاصل نہیں ہوئی تھی۔پارٹی کو لگتا ہے کہ ان میں سے 54 سیٹیں ایسی ہیں جس پر پارٹی جیتنے کی پوزیشن میں ہے جبکہ 22 سیٹیں ایسی ہیں جہاں کانٹے کا مقابلہ ہو سکتا ہے۔جن 119 سیٹوں پر پارٹی کی نظر ہے اس کے لئے امیدواروں کی نشاندہی کرنے کا کام بھی شروع ہو چکا ہے۔معلومات کے مطابق پارٹی کے سینئر لیڈر اپنی انتخابی مہم شروع کرنے کے لئے این ڈی اے میں سیٹ تقسیم تک انتظار نہیں کریں گے۔جن 119 سیٹوںکی نشاندہی کی گئی ہے ان میں سے تقریباً100 سیٹوں پر انتخابی مہم کا کام اپریل سے ہی شروع ہو جائے گا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close