پٹنہ

سنگھی سازش میں الجھتے جا رہے ہیں مسلمان : اشفاق رحمن : رمضان، عید اور اب بقرعید پر ہائے توبہ : جے ڈی آر

پٹنہ25جولائی(آئی این ایس انڈیا) جنتادل راشٹروادی نے کو رونا وائرس کے اس ناگہانی دور میں اسلام کی رسی مضبوطی سے تھامے رکھنے کی اپیل کی ہے۔جے ڈی آر کے قومی کنوینر اشفاق رحمن کا کہنا ہے کہ اس مشکل گھڑی میں شریعت کے سبھی ضوابط پر عمل پیرا رہنے کی ضرورت ہے۔مگردیکھنے میں یہ آ رہا ہے کہ جتنا حکومت کا دباؤ نہیں ہے اس سے زیادہ ہم خود پیچھے ہٹتے جا رہے ہیں۔کئی مساجد میں جمعہ کی نماز نہیں ہو رہی۔حالانکہ اس معاملہ میں ضلع انتظامیہ کی پہلے کی طرح کوئی سختی نہیں ہے اور یہ زیادہ تر تعلیم یافتہ کالونیوں میں دیکھنے کو مل رہا ہے۔

اشفاق رحمن کہتے ہیں کہ اس طرح تو نئی نسل اسلام کے تئیں بے حس ہو جائے گی۔بھارت میں موجودہ حکومت اور اس کے ہمنوا طبقہ چاہتا ہے کہ اسلام کی جڑیں آہستہ آہستہ کمزور ہو جائیں۔کرونا اگر طویل عرصہ تک برقرار رہا تو کیا مسلمان اپنے مذہبی عقیدے سے دور ہو جائے گا؟سنگھ اور سرکار کی سازش یہی ہے۔جبکہ وہ اپنی مذہبی عقیدے پر سرگرم طور سے قائم ہے۔رام مندر کی تعمیر ہو رہی ہے۔سرکاری سطح پر پوجا ارچنا کی بھی تیاری ہے۔

لیکن مسلمان رمضان، عید اور اب بقرعید نہ منائیں،ان کی یہی منشاء ہے اور مسلمان اس سنگھی سازش میں الجھتے جا رہے ہیں۔اشفاق رحمن کہتے ہیں کہ ہمارے ہی کچھ نا سمجھ لوگ قربانی کو لیکر الگ الگ رائے دے رہے ہیں۔قربانی نہ کرنے کا مشورہ دے رہے ہیں،قربانی کا پیسہ غریبوں میں تقسیم کرنے کی بات کر رہے ہیں۔غریبوں کی مدد الگ بات ہے اور قربانی کا مسئلہ الگ ہے۔قربانی اللہ کا حکم ہے۔صاحب حیثیت کے لئے ضروری ہے۔زیادہ تاویلیں پیش کرنے کی ضرورت نہیں ہے ،جو ضروری ہے وہ ضروری ہے۔آج ہر آدمی خود کو مفتی سمجھنے لگا ہے۔ایسا اس لئے بھی ہو رہا ہے کہ علماء دین نے امت کو کوئی ٹھوس نظریہ پیش کرنے کی جگہ خاموشی کی چادر تان رکھی ہے۔ان کی خاموشی شک کے دائرے میں ہے۔سیاسی آقاؤں کی خوشنودی حاصل کرنے کی خاطر ان کے زبان پر تالہ پڑ گیا ہے۔

جنتا دل راشٹروادی اسی لئے امامت صغرٰی اور امامت کبریٰ کی بات کرتی ہے۔مذہبی امور پر علماء راستہ دکھائیں اور سیاست کی بات سیاست دانوں کو کرنے دیں۔حالات انتہاء ناگزیر ہے۔کرونا کے بہانے اسلام کو بیگانہ کرنے کی منظم سازش رچی گئی ہے۔حکومت جتنا پیچھے نہیں ڈھکیل رہی اس سے کہیں زیادہ دباؤ ہم خود بناتے جا رہے ہیں۔اشفاق رحمن نے کہا ہے کہ قربانی کرنے میں کوئی ہچکچاہٹ نہ دیکھائیں بلکہ پہلے کی طرح ہی کریں اور بے جھجھک کریں۔ساتھ میں مسجدوں میں نماز قائم کریں۔کرونا سے بچنے کا اب کوئی راستہ نہیں ہے سوا اللہ سے اپنے گناہوں کا توبہ کریں۔عبادتوں سے اللہ کی خوشنودی حاصل کریں۔اسلام کی رسی کو مضبوطی سے تھام لیں۔اسلام پر کسی طرح کی آنچ نہ آنے دیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

Leave a Reply

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
Close