پٹنہ

یوپی۔ بہار :آسمانی بجلی کے مہلوکین کی تعداد 107 پہونچی، صدرجمہوریہ کااظہارافسوس

پٹنہ ؍ لکھنؤ، 26 جون (آئی این ایس انڈیا) اتر پردیش اور بہار میں جمعرات کو آسمانی بجلی نے تباہی مچا دی۔ بہار میں بجلی گرنے سے 83 افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے، جبکہ اتر پردیش میں آسمانی بجلی کی زد میں آکر 24 افراد ہلاک ہوگئے۔ دونوں ریاستوں میں آسمانی بجلی گرنے سے مجموعی طور پر 107 افراد ہلاک ہوگئے۔محکمہ موسمیات نے پہلے ہی اترپردیش اور بہار کے لوگوں کو تیز بارش اور آسمانی بجلی کے بارے میں انتباہ جاری کیا تھا۔

محکمہ نے بتایا تھا کہ اگلے 72 گھنٹوں تک لوگوں کو ضرورت پڑنے پر گھروں سے باہر نہیں نکلنا چاہئے۔ معلومات کے مطابق بہار کے 23 اضلاع میں آسمانی بجلی گرنے سے 83 افراد ہلاک ہوگئے۔ ضلع گوپال گنج میں سب سے زیادہ 13 اموات ریکارڈ کی گئیں۔ مدھوبنی میں آسمانی بجلی گرنے سے 8 افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

بھاگل پور اور سیون میں 6-6 افراد ہلاک ہوئے۔اس کے علاوہ مشرقی چمپارن، دربھنگہ اور بنکا میں بھی آسمانی بجلی گرنے سے 5-5 افراد ہلاک ہوئے، بہت سے معصوم بچے اور خواتین بھی آسمانی بجلی کی لپیٹ میں آئی ہیں۔ بہت سے چھوٹے بچے بری طرح جھلس گئے ہیں۔

معلومات کے مطابق، اس دوران تیز بارش ہوئی، زیادہ تر لوگ اپنے اپنے کھیتوں میں چلے گئے۔ آسمانی بجلی گرنے سے لوگوں کے مکانات میں بھی آگ لگ گئی ، جس میں متعدد قیمتی سامان جل گئے۔اترپردیش میں بھی 24 افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ ان میں سے 9 افراد دیوریا میں جاں بحق ہوئے۔

اس کے علاوہ پریاگ راج میں 6، امبیڈکر نگر میں تین اور بارہ بنکی میں دو افراد کی موت ہوگئی۔ صدر رام ناتھ کووند نے یوپی بہار میں آسمانی بجلی سے اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے لوگوں سے اظہار تعزیت کیا۔ انہوں نے ٹویٹ کیاکہ اتر پردیش اور بہار کے متعدد حصوں میں بھاری ہلاکتوں اور بجلی چمک و طوفان کی خبر سے غمزدہ ہوں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

یہ بھی پڑھیں
Close
Back to top button
Close
Close