پٹنہ

پٹنہ کی نماز عیدین کمیٹی کا بڑا اعلان ، گاندھی میدان میں نہیں پڑھی جائےگی عیدالفطر کی نماز !

گاندھی میدان میں عید کی نماز مزید بہتر سے بہتر سہولتوں کے ساتھ ادا کی جائے اس کے مدّنظر عیدین کمیٹی قائم کیاگیا ہے۔ شہر کے خاص لوگ اس کمیٹی کے ممبر ہیں۔ عیدین کمیٹی کے صدر محمود عالم کے مطابق وہ ۲۰۰۲ سے لگاتار عیدافطر کی نماز اور گاندھی میدان کا انتظام دیکھتے آرہے ہیں۔
پٹنہ ۔ 22 مئی 2020 (محفوظ عالم)
پٹنہ کے گاندھی میدان میں ۱۹۲۵ سے عید الفطر کی نماز ادا کی جاتی رہی ہے۔ شہر کے خاص لوگوں نے اس روایت کو قائم رکھا ہے نتیجہ کے طور پر آج بہار کی سب سے بڑی عید کی جماعت گاندھی میدان میں ہوتی ہے جہاں چالیس سے پچاس ہزار لوگ ایک جماعت میں عیدا لفطر اور عیدالضحی کی نماز ادا کرتے ہیں۔

گاندھی میدان میں عید کی نماز مزید بہتر سے بہتر سہولتوں کے ساتھ ادا کی جائے اس کے مدّنظر عیدین کمیٹی قائم کیاگیا ہے۔ شہر کے خاص لوگ اس کمیٹی کے ممبر ہیں۔ عیدین کمیٹی کے صدر محمود عالم کے مطابق وہ ۲۰۰۲ سے لگاتار عیدافطر کی نماز اور گاندھی میدان کا انتظام دیکھتے آرہے ہیں۔

محمود عالم کا دعویٰ ہیکہ ۲۰۰۲ کے بعد گاندھی میدان میں نماز عیدالفطر کی ادائےگی میں مزید سہولت مہیا کی گئ ہے۔ ساتھ ہی وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے بھی ایک نئ روایت شروع کی ہے۔ عید کی نماز میں وزیر اعلیٰ بھی گاندھی میدان پہنچتے ہیں، نمازیوں سے گلے ملتے ہیں اور ان کی دعائیں لیتے ہیں۔ لیکن اس بار گاندھی میدان میں یہ نظارہ دیکھنے کو نہیں ملےگا۔

عید کے دن پٹنہ کے چاروں جانب سے لوگوں کی قطاریں گاندھی میدان کا رخ کرتی ہے لیکن لاک ڈاون کے سبب اس بار گاندھی میدان میں عیدالفطر کی نماز نہیں ہوگی۔ عیدین کمیٹی نے واضح اعلان کیا ہیکہ گاندھی میدان میں عید کی نماز اس دفعہ نہیں پڑھی جائےگی۔ ادھر امارت شرعیہ بہار نے بھی اعلان کیا ہیکہ عیدالفطر کی نماز کے لئے لوگ عید گاہ اور مساجد میں جانے سے پرہیز کرے۔

امارت نے لوگوں سے اپنے اپنے گھروں میں عیدالفطر کی نماز ادا کرنے کی اپیل کی ہے۔ ساتھ ہی کہا ہیکہ جس مساجد میں چار سے پانچ لوگ موجود ہوں وہ وہاں عید کی نماز قائم کرے لیکن سوشل ڈسٹنسینگ کا ضرور خیال رکھیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close