قومی

پنیرسیلوم سمیت چارافراد اے آئی اے ڈی ایم کے سے برخاست

چنئی ،۱۱؍جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) آل انڈیا انا دراوڑ منیترا کژگم (اے آئی اے ڈی ایم کے) کی جنرل کونسل نے پیر کو پارٹی کے خزانچی اور سابق وزیر اعلیٰ او پنیر سیلوم و ان کے تین دیگر حامیوں کو پارٹی ضوابط کی خلاف ورزی کے الزام میں پارٹی کی بنیادی رکنیت سے برخاست کردیا۔ سابق وزیر ناتھم آر۔ وشواناتھن کی طرف سے پیش کردہ خصوصی قرارداد کو جنرل کونسل کی میٹنگ میں متفقہ طور پر منظور کیا گیا۔

وشواناتھن کی طرف سے پیش کردہ قرارداد میں کہا گیا ہے کہ پنیرسیلوم اور ان کے حامی وسابق وزیر آر۔ ویتھلنگ، سابق ایم ایل اے جے۔ سی ڈی پربھاکرن اور منوج پنڈیان کو پارٹی کو غیر مستحکم کرنے کے الزام میں ان کے عہدوں اور بنیادی رکنیت سے برخاست کیا جاتا ہے۔ اجلاس میں صوتی ووٹ سے قرارداد منظور ہونے کے بعد پارٹی کارکنوں سے اپیل کی گئی کہ وہ ان رہنماؤں سے کسی قسم کا رابطہ نہ رکھیں۔

جنرل اسمبلی کی میٹنگ میں کئے گئے اس فیصلے کے بعد پنیرسیلوم پارٹی دفتر پہنچے اور اپنے خلاف کی گئی کارروائی کی مذمت کی۔ انہوں نے کہا کہ پلانی سوامی اور منوسامی کو انہیں یکطرفہ طور پر برطرف کرنے کا حق نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ پارٹی کے 1.5 کروڑ سے زیادہ حامیوں نے مجھے پارٹی کا شریک کنوینر منتخب کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ ای کے۔ پلانی سوامی اور منوسامی کو پارٹی کے ضوابط کی خلاف ورزی کرنے کے الزام میں پارٹی کی بنیادی رکنیت سے برخاست کرنے کا اعلان کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کریں گے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button