پنجاب

میں تحقیقات میں شامل ہوں گا: دیپ سدھو

چنڈی گڑھ29جنوری(آئی این ایس انڈیا) دہلی کے لال قلعے پر مذہبی جھنڈا لگانے کے معاملے کے ایک ملزم دیپ سدھو نے کہا ہے کہ حقیقت کو سامنے لانے کے لیے اسے کچھ وقت درکار ہے اور اس کے بعد وہ تفتیش میں شامل ہوں گے۔سدھو کے خلاف مذہبی جھنڈا لگانے کے الزام میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ انہوں نے فیس بک پر ایک ویڈیو شائع کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرے خلاف گرفتاری کا وارنٹ جاری کیا گیا ہے اور اس کے بعد ایک چیک آؤٹ نوٹس بھی جاری کیا گیا ہے۔ سب سے پہلے میں یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ میں تحقیقات میں شامل ہوں گا۔سدھو نے کہا کہ حقیقت کو سامنے لانے کے لیے انہیں کچھ وقت درکار ہے۔سدھو نے کہاہے کہ کیونکہ غلط اطلاع پھیلائی گئی ہے اور یہ عوام کو گمراہ کررہی ہے۔لہٰذا مجھے حقیقت کو سامنے لانے کے لیے کچھ وقت درکار ہے اور اس کے بعد میں تحقیقات میں شامل ہوجاؤں گا۔ویڈیو میں کہاگیاہے کہ میں تحقیقاتی ایجنسیوں سے درخواست کرتا ہوںجب میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا ہے تو میں کیوں بھاگوں گا اور خوفزدہ ہوں گا۔ مجھے ڈر نہیں ہے میں نے کچھ غلط نہیں کیا ہے اور وہ سامنے آجائے گا۔سدھو نے تفتیشی ایجنسیوں اور محکمہ پولیس کو بتایا ہے کہ وہ دو دن میں ان کے سامنے پیش ہوں گے۔انہوں نے کہا ، "جس طرح کی افواہیں پھیلائی جارہی ہیں وہ حقائق پر مبنی نہیں ہیں۔حقائق کو سامنے لانے کے لیے مجھے دو دن درکار ہیں اور میں تمام ثبوت اور شواہد اکٹھا کروں گا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close