ویڈیوز

بال بال بچ گئے بھارتیہ کسان یونین کے رہنما راکیش ٹکیت : دیکھیں ویڈیو

 

ہریانہ کے جند میں جس اسٹیج پر بھارتیہ کسان یونین  کے رہنما راکیش ٹکیٹ اور دوسرے کسان رہنما کھڑے تھے اور بات چیت کررہے تھے  اچانک منہدم ہوگیا ۔ جس میں راکیش ٹکیت بال بال بچ گئے  صرف معمولی چوٹیں لگی ہیں

پوری تفصیلات یہ ہے 

جند کے گاؤں کنڈیلہ میں جاری مہاپنچایت میں ایک حادثہ پیش آگیا۔ راکیش ٹکیت جس اسٹیج سے کسانوں کو مخاطب کررہے تھے ،وہ گر گیا، کئی دوسرے کسان رہنما بھی اسٹیج پر موجود تھے۔ حادثے میں راکیش ٹکیت سمیت کئی رہنماؤں کو معمولی چوٹیںبھی آئیں۔ حادثے سے قبل مہا پنچایت سے خطاب کرتے ہوئے راکیش ٹکیت نے کہا کہ حکومت کی طرف سے گھیراؤ ابھی ایک نمونہ ہے۔ آنے والے دنوں میں غریبوں کی روٹی پر قلعہ بندی کر دی جائے گی ۔ یہ تحریک اس بات کو یقینی بنانے کے لئے شروع کی گئی ہے کہ غریبوں کی روٹی تجوری میں رکھ نہ لی جائے، حکومت کو اکتوبر ماہ تک کا وقت دیا گیا ہے۔ کسان اس کے مطابق اگلی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کریں گے ، جو بھی صورتحال ہوگی،اسی کے مطابق کسان اس پر تبادلہ خیال کریں گے۔سنگین دفعات کے متعلق راکیش ٹکیت نے کہا کہ جب تک یہ تحریک چلتی رہے گی ، اس کا سلسلہ آگے بڑھتا رہے گا۔ اس کے بعد میں جیل میں رہوں گا ۔ جب میڈیا نے لال قلعے پر مذہبی جھنڈا لگانے کے واقعے پر سوال اٹھایاتھا تو ٹکیت نے کہا کہ یہ سب حکومت کی شازس کا حصہ ہے ۔راکیش ٹکیت نے کہا کہ پچھلے 35 دنوں سے کسانوں کے مفاد میں تحریکیں چل رہی ہیں۔ اگرچہ ہم نے کہا کہ ہم پارلیمنٹ کا گھیراؤ کریں گے ، لیکن ہم نے کبھی لال قلعہ جانے کی بات نہیں کی اور نہ ہی لال قلعہ گئے۔ جن لوگوں نے 26 جنوری کو لال قلعہ گئے اور وہاں مخصوص پرچم لہرایا ،وہ کسان نہیں تھے اوریہ وہ لوگ تھے،جو حکومت کی سازش کا حصہ تھے، جب انہیں جانے کی اجازت ملی اور ان کو اس کا راستہ دیا گیا، تو وہ بغیر کسی روکاوٹ کے چلے گئے۔کنڈیلہ میں مہاپنچایت میں 5 قراردادیں منظور کی گئیں ۔(۱)تینوں مرکزی زرعی قوانین کو منسوخ کیا جانا چاہئے۔(۲)کم سے کم سپورٹ پرائس (ایم ایس پی) سے متعلق قانون سازی کی جانی چاہئے۔ (۳)سوامی ناتھن کی رپورٹ پر عمل درآمد کیا جانا چاہیے ۔ (۴)کسانوں کا قرض معاف کیا جائے۔(۵)26 جنوری کو گرفتار کئے گئے کسانوں کو رہا کیا جانا چاہیے اور ضبط کئے گئے ٹریکٹروں کوبھی چھوڑا جانا چاہیے ، نیز دائر مقدمات بھی واپس لئے جانے چاہیے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close