یوپی

میرٹھ قتل : سیما کے قتل کے ملزم باپ اور کزن کو کوئی پچھتاوا نہیں

میرٹھ، 22جون (هندوستان اردو ٹائمز) میرٹھ میں ناجائز رشتوں کے شبہ میں قتل کی وارداتوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ شہر کے تھانہ لساڑی گیٹ کی حدود میں طلاق یافتہ خاتون کو اس کے ہی باپ اور کزن نے شک کی بنا پر بے دردی سے قتل کر دیا۔ طلاق یافتہ خاتون اپنی دو بیٹیوں کے ساتھ علاقے میں کرائے پر رہ رہی تھی۔ اس قتل نے جہاں باہمی رشتوں کے حوالے سے کئی سوالات کو جنم دیا وہیں دو بیٹیوں کے سروں سے ماں کا سایہ بھی چھن گیا۔

طلاق شدہ سیما (35) کو منگل کی صبح میرٹھ کے لساڈی گیٹ کے شیام نگر میں بی ایس پی لیڈر دلشاد شوکت کے گھر پر اس کے والد اور کزن نے گولی مار کر ہلاک کر دیا۔ پولیس کا دعویٰ ہے کہ یہ واقعہ سیما کے کئی لوگوں سے روابط کے شبہ میں کیا گیا۔پولیس نے ملزم والد اسلم اور کزن زبیر کو گرفتار کر لیا ہے۔ سیماکے قتل پر والد اور کزن کو کوئی پچھتاوا نہیں تھا۔ پولیس کی پوچھ گچھ کے دوران دونوں نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔

خیال رہے کہ سیما اپنی دو بیٹیوں کے ساتھ کرائے پر بی ایس پی لیڈر دلشاد شوکت کے دو منزلہ مکان میں رہتی تھی۔ پولیس نے بتایا کہ سیما کا بھائی فرمان منگل کی صبح 8 بجے سیماکے گھر گیا ، اس کے بعد وہ بستر پر مردہ پڑی ہوئی ملی۔ اس کی دو بیٹیاں لائبہ (7) اور کلثوم (6) ایک ہی کمرے میں سو رہی تھیں۔سیما کے بھائی فرمان نے اپنی بہن کو گھر میں مردہ دیکھ کر الارم بجایا تو آس پاس کے لوگ جمع ہوگئے۔ لوگوں نے پولیس کو اطلاع دی۔ سی او کوتوالی اروند چورسیا اور انسپکٹر اتم سنگھ راٹھور پولس ٹیم کے ساتھ موقع پر پہنچے۔

پڑوسیوں نے بتایا کہ والد اسلم صبح پانچ بجے کزن زبیر کے ہمراہ سیما کے پاس آئے تھے۔پولیس نے فوری طور پر اسلم اور زبیر کو گھیرے میں لے کر گرفتار کر لیا۔ سی او کوتوالی کے مطابق دونوں ملزمان نے دوران تفتیش بتایا کہ سیما کے کئی لوگوں سے تعلقات تھے۔ وہ خاندان کو بدنام کر رہی تھی۔ اسی وجہ سے اس نے سیماکا قتل کردیا ۔پولیس کے مطابق صائمہ کے بھائی فرمان کی مدعیت میں والد اسلم اور کزن زبیر کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button