دہلی

مودی سرکار دہلی میں 53 مندروں کومسما رکرنے جارہی ہے : عام آ دمی پارٹی

نئی دہلی ، 22جون (ہندوستان اردو ٹائمز) عام آدمی پارٹی نے بدھ کو کہا کہ بی جے پی کے لوگ پورے ملک میں مذہب کے نام پر ڈرامہ کرتے ہیں اور دہلی میں 53 مندروں کو منہدم کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں ۔

آج یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے آپ کے سینئر لیڈر اور راجیہ سبھا ایم پی سنجے سنگھ نے کہا بی جے پی والے مذہب کے نام پر ڈرامہ کرتے ہیں۔ مذہب کے نام پر لڑائیاں کروائیں گے، نفرتیں پھیلائیں گے۔ دہلی میں مذہب کے نام پر ڈرامہ ہوگا اور بی جے پی والے مذہب کے سب سے بڑے ٹھیکیدار بننے کا کام کریں گے، لیکن دہلی میں ایک دو نہیں 53 مندروں کو توڑنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ بی جے پی اور نریندر مودی حکومت دہلی میں 53 مندروں کو منہدم کرنے جا رہی ہے۔

مودی حکومت نے دہلی حکومت کو خط لکھا ہے کہ ہمیں مذہبی کمیٹی سے اجازت درکار ہے۔ مرکزی حکومت نے دہلی حکومت کو خط لکھا ہے کہ ہمیں دہلی میں 53 مندروں کو گرانے کی اجازت درکار ہے۔مسٹر سنگھ نے کہاکہ وزیر اعظم نریندر مودی، بی جے پی دہلی کے ریاستی صدر آدیش گپتا اور یہ بی جے پی کا اصلی چہرہ ہے۔ یہ لوگ دہلی کے 53 مندروں کو تباہ کرنے جا رہے ہیں۔ جس میں شری رام، شری کرشن، ہنومان، مہادیو شیوا، ماتا درگا سمیت سائی بابا کے مندر کو کوئی نہیں چھوڑ رہا ہے۔بی جے پی والے ملک بھر میں مذہب اور مندر کے نام پر ڈرامہ کرتے ہیں۔

دہلی میں جہاں عام آدمی پارٹی کی حکومت ہے وہاں 53 مندروں کو گرانے جا رہے ہیں۔میڈیا کو ایک کاغذ دکھاتے ہوئے مسٹر سنگھ نے کہا کہ یہ پیپر اس بات کا ثبوت ہے کہ بی جے پی کے لوگ ہندو مذہب کے کتنے بڑے مخالف ہیں ۔ آ پ کا مطالبہ ہے کہ بی جے پی کو سامنے آکر 53 مندروں کے انہدام کے معاملے میں دہلی کے لوگوں کو جواب دینا چاہیے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button