ممبئی

امن وامان اور انصاف کے لیے علماء نے پھر دعاؤں کا اہتمام کیا

معین میاں کی ہدایت پر این آر سی، سی اے اے اور این پی آر کے خلاف دستخطی مہم کا آغاز

ممبئی۔۳ ؍جنوری : بعدنمازجمعہ مساجد کے باہر علماے اھلسنت نے ملک میں پھیلی نفرت کےخلاف امن و سلامتی اور عدل وانصاف کی بحالی کے لئے دعائیں کی گئیں ۔ چھوٹا سونا پور ممبئ بلال مسجد کے باہر معین المشائخ حضرت علامہ سید معین الدین اشرف اشرفی الجیلانی استانہ کچھوچھ شریف نے خطیب وامام حضرت قاری مشتاق احمد تیغی صاحب کے ساتھ تمام مصلیوں کے ہمراہ دعاء کرتےہوئے فرمایا کہ ھم اپنے وطن عزیز ھندوستان کےلئے امن و امان کی دعائیں کرتے رہیں گے اس لئے کہ یہ ھمارا وطن ہے ۔ ہم اپنےبھارت میں نفرت اور بھید بھاؤ پھیلانے والوں پر پیار محبت کا پھول برسا کر انکو بنائیں گے حضرت معین میاں نے این آر سی، سی اے اے اور این پی آر کے خلاف دستخطی مھم کا آغاز بھی فرمایا اپنے مریدوں ،اور چاہنے والوں اور ممبئ عظمی کے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ اس دستخطی مھم میں شامل ہوں۔ کھتری مسجد اور مینارہ مسجد کے باہر بھی رضااکیڈمی کی طرف سے دعائیں کرتے ہوئے الحاج محمد سعید نوری سربراہ رضااکیڈمی نے فرمایا کہ اس کالے قانون، کے خلاف ھمارا پر امن احتجاج جاری رہے گا ۔ ہم بھارت کے پر امن شہری ہیں اور اپنے ھندوستان میں پر امن طریقے سے رہتے ہیں ، ہندوستانیوں پر ظلم و بربریت کرکے زبردستی کوئی قانون تھوپا نہیں جاسکتا ہے ۔ مینارہ مسجد اور کھتری مسجد کے باہر کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی خاص کر سماجی کارکن جناب ابراھیم طائی صاحب مسلم کونسل جناب ناظم خان رضوی جناب الحاج محمد رفیق رضوی ،جناب امن میاں رضوی جناب سلیم رضوی جناب عباس رضوی اور کثیر تعداد میں مصلیوں نے شرکت کی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close