ممبئی

NEETکے نتائج پرخدشہ کااظہار، عدالت میں درخواست داخل

ممبئی 20اکتوبر(آئی این ایس انڈیا) نیشنل ٹیسٹنگ ایجنسی (NTA) نے نیٹ 2020کا رزلٹ 16 اکتوبر کو جاری کر دیاہے۔ لیکن اب اس نتیجے پرتنازعات پیدا ہونا شروع ہوگئے ہیں۔ کچھ طلباء اس کے خلاف ہائی کورٹ پہنچ رہے ہیں۔ ان طلباء کاکہناہے کہ این ٹی اے کے ذریعہ جاری کردہ OMR شیٹ کے ان کے مارکس اورNEET کے نتائج میں نمایاں فرق ہے۔ امراوتی(مہاراشٹرا) کی طالبہ وسندھرا بھوجانے نے بمبئی ہائی کورٹ میں درخواست دائرکی ہے۔ وسندھرا کا کہنا ہے کہ این ٹی اے کے ذریعہ جاری کردہ اس کی NEAT OMR شیٹ کے مطابق اسے 720 میں سے 600 نمبر ملناچاہیے تھا۔ لیکن وہ NEET کا نتیجہ جاری ہونے کے بعد حیرت زدہ رہی۔ اسے 720 میں سے 0 ملا۔اس سلسلے میں پٹیشن دائر کرنے کی تیاری کرنے والے ایک اورطالب علم نے بتایاہے کہ اسے NEET میں 212 نمبر ملے ہیں جو ان کے OMR شیٹ کے حساب سے بہت کم ہیں۔اس کے والد کا کہنا ہے کہ او ایم آر شیٹ کے حساب کتاب اور انسرشیٹ کے مطابق اسے 700 سے زیادہ نمبر ملنا چاہیے تھے۔کچھ والدین کا کہنا ہے کہ طلبا کو محسوس ہوتا ہے کہ ان کی اوایم آرشیٹس میں چھیڑ چھاڑ ہوئی ہے۔ کچھ والدین نے کہاہے کہ جوابی سافٹ ویئر نے کسی طالب علم کے تقریباََ 60 سوالات ریکارڈپرنہیں لیے ہیں۔اسی کے ساتھ ہی ایک سرکاری عہدے دار کا کہنا ہے کہ کئی بار امتحان میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کے دباؤمیں طلباء اوایم آر شیٹس بھرنہیں پاتے ہیں۔ماضی میں بھی عدالت میں ایسے معاملات آئے ہیںجنہیں بعدمیں واپس لیاگیاہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close