ممبئی

’تنشکا‘کے اشتہارپرجاوید اختر کاتبصرہ : کہا غیر مذہبی شادیوں سے کچھ لوگ پریشان ہوجاتے ہیں

ممبئی، 14 اکتوبر (آئی این ایس انڈیا)جیولری برانڈ تنشکا اب سرخیوں کا حصہ بن گیا ہے۔ اپنے ایک اشتہار کی وجہ سے تنشکااب بھی بحث کا موضوع بناہواہے۔ اس اشتہار پر سوشل میڈیا پر ملا جلا ردعمل مل رہا ہے، کچھ لوگ اس اشتہار کی حمایت کر رہے ہیں، جبکہ کچھ لوگ اس کا بائیکاٹ کرنے کی اپیل کررہے ہیں، بہت سارے ستاروں نے بھی اس کے بارے میں ٹویٹ کیا ہے۔ اس اشتہار کو دیکھنے کے بعد کچھ لوگ اسے ’لو جہاد‘ اور’فرضی سیکولرازم‘ قرار دے رہے ہیں۔ ان سب کے درمیان اب اس کے اشتہار کے بارے میں نغمہ نگار جاوید اختر نے اپنی رائے دی ہے۔اشتہار کے حوالے سے ایک ٹویٹ میں جاوید لکھتے ہیں کہ خواہ وہ فلم ہو، اشتہار ہو یا حقیقی زندگی، ہر جگہ بین المذاہب شادی ہمیشہ کچھ لوگوں کو پریشان کرتی ہے، جس میں لڑکی فریق کی طرف سے غم و غصہ سامنے آتا ہے یا اس سے متعلق ہوتاہے، یہ غم و غصہ اس یقین پر مبنی ہے کہ خواتین اپنی جائداد کی طرح ہیں، ناراض لوگ دلہن اور اس کے کنبے کو گائوں کے مویشی اور چور سمجھتے ہیں۔اس ٹویٹ کی وجہ سے جاوید اختر لوگوں کی ناراضگی کا شکار ہوگئے۔ اس ٹویٹ کے جواب میں لوگ گیت لکھنے والے کے تبصرے پر اپنا رد عمل دیتے ہوئے نظر آئے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close