ممبئی

ممبئی سے 1039 مہاجر مزدورکو لے کر اسپیشل ٹرین وارانسی پہنچی : بھوک پیاس اور مبینہ کرونا کے باعث ۲؍مہاجر مزدور ہلاک

وارانسی، مڑوا ڈیہہ۲۷؍ مئی ( آئی این ایس انڈیا ) کرونا کی وباکے وقت میں اپنوں کے درمیان پہنچنے کا سفر کئی مہاجر مزدور کے لئے سفر آخرت ثابت ہوا ،جنہوں نے مبینہ طور پر بھوک او ر پیاس کے باعث بے موت مر گئے ۔

خیال رہے کہ بدھ کو ممبئی سے وارانسی کے مڑوا ڈیہہ پہنچی ورکرز اسپیشل ٹرین میں دو مہاجر مزدور فوت شدہ حالت میں ملے ۔ممکنہ طور پر وہ بھوک اور پیاس سے جان گنوائی تھی ، تاہم ان مردہ مہاجر مزدور میں کرونا کے وجود کی تحقیق شروع ہوگئی ہے ۔ خیال رہے کہ ان میں ایک اعظم گڑھ تو دوسرا جونپور کا باسی تھا۔

لاشوں کی شناخت ہونے کے بعد کروناتحقیقات کے لئے سیمپل لیا گیا ہے۔جی آر پی، آر پی ایف اور پولیس نے ’احتیاط ‘برتتے ہوئے لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے ڈسٹرکٹ ہسپتال بھیجا ہے۔اس سے قبل بدھ کو مہاراشٹر سے 1039 کارکنوں کو لے کر خصوصی ٹرین (گاڑی نمبر 01770) مڑوا ڈیہہ اسٹیشن پہنچی۔ٹرین کے S-15 اور معذور کمپارٹمنٹ میں سفر کر رہے دو مہاجر مزدور مردہ حالت میں ملے۔ کرونا کے خوف کے باعث ان کی لاشوں کو کوئی چھونے کے لیے تیار نہیں تھا۔

ایک مزدور کی شناخت جونپور کے بدلہ پورگاؤں رہائشی 30 سالہ معذور دشرتھ کے طور پر ہوئی۔دشرتھ کے جیجا پنا لال نے بتایا کہ وہ 9 دیگر رشتہ داروں کے ساتھ ٹرین میں سفر کر رہے تھے، ممبئی سے کھانا لے کر چلے تھے۔ راستے میں بھی ہمیںمبینہ طور پر ’کھانا‘ ملا تھا۔ دشرتھ چل نہیں پاتا تھا۔

الہ آبادمیں تھوڑی طبیعت خراب لگ رہی تھی. پھر وہ سو گیا، کاشی پہنچنے کے بعد جب اسے اٹھایا تو اٹھ نہ سکا۔دوسرے میت کی شناخت اعظم گڑھ کے رام رتن رگھوناتھ کے طور پر ہوئی، جیب سے ملے کاغذات کے مطابق، اس کی عمر 63 سال تھی۔ اس کے پاس سے جوگیشوری ، ممبئی کا پتہ بھی ملا۔کسی ایک نمبر پر یہ شخص مسلسل بات کر رہا تھا، وہ بنیادی طور پر اعظم گڑھ کا رہنے والا تھا۔ اسٹیشن مینیجر ارون کمار نے بتایا کہ ڈاکٹروں کی ٹیم کو تحقیقات کے لئے بلایا ہے، سیمپل لینے کے بعد لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا گیا ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close