دہلیقومی

معطل جج اور وکیل شوہر کیخلاف سی بی آئی نے درج کی نئی ایف آئی آر

نئی دہلی،30جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) سنٹرل بیورو آف انوسٹی گیشن (سی بی آئی) نے دہلی کی ایک معطل جج اور ان کے شوہر کے خلاف 2.99 کروڑ روپے کے اثاثے حاصل کرنے کے الزام میں نئی ایف آئی آر درج کی ہے۔ تیس ہزاری کورٹ کی معطل سینئر سول جج (ویسٹ) رچنا تیواری لکھن پال اور ان کے شوہر ایڈوکیٹ آلوک لکھن پال کے پاس مبینہ طور پر 29907036 روپے کے اثاثے ہیں جو ان کے معلوم ذرائع آمدن کا تقریباً 283.61 فیصد ہے۔

رپورٹ کے مطابق رچنا نے 27 جولائی 2006 سے 28 ستمبر 2016 کے درمیان اپنے شوہر کے نام پر کافی اثاثے جمع کیے تھے۔ سی بی آئی کو معلوم ہوا ہے کہ ان کے اثاثے 1.09 کروڑ روپے سے بڑھ کر 3.53 کروڑ روپے ہو گئے ہیں۔ اس سے قبل 28 ستمبر 2016 کو ایک جال بچھایا گیا تھا جس کے دوران مقامی کمشنر ملزم وشال موہن کو گرفتار کیا گیا تھا اور ان کے قبضے سے ایک لاکھ روپے رشوت کی رقم بھی برآمد ہوئی تھی۔

رچنا تیواری لکھن پال اور ان کے شوہر آلوک لکھن پال کو بھی 2016 میں گرفتار کیا گیا تھا اور ان کی رہائش گاہ سے 400000 روپے کی جعلسازی کی رقم برآمد کی گئی تھی۔ ملزمان کے گھروں کی تلاشی کے دوران 9409900 روپے کی نقدی برآمد ہوئی تھی، جس کا کوئی حساب نہیں تھا۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button