شوبزممبئی

معروف گلوکارہ وشال ددلانی نےمسلمانوں کے حق میں کیا ٹوئٹ،کہا،مسلمانوں کادرد ہمارادرد ہے،ملک کی سیاسی صورتحال شرمناک ہے

ممبئی ،16جون (ہندوستان اردو ٹائمز) نوپور شرما کے پیغمبراسلام سے متعلق گستاخانہ بیان کے بعد ہر طرف ہنگامہ برپا ہے۔ دریں اثنا گلوکار اور میوزک کمپوزر وشال ددلانی نے ٹویٹ کرکے ہندوستانی مسلمانوں کو یقین دلایا ہے کہ وہ بھی اس ملک کا حصہ ہیں اور ان کا درد ہمارا درد ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے کہا ہے کہ وہ ملک کی سیاست پر شرمندہ ہیں۔ جس پر کئی لوگوں نے اپنا ردعمل دیا تو کسی نے ان کی کھنچائی بھی کی۔

وشال ددلانی نے لکھا ہے کہ میں ہندوستانی ہندوؤں کی جانب سے ہندوستانی مسلمانوں سے یہ کہنا چاہتا ہوں۔ آپ کو دیکھا اور سنا جاتا ہے، پیار کیا جاتا ہے اور آپ کی تعریف کی جاتی ہے۔ آپ کا درد ہمارا درد ہے۔ آپ کی حب الوطنی پر کوئی سوال نہیں ہے، آپ کی شناخت ہندوستان یا کسی اور کے مذہب کے لیے خطرہ نہیں ہے۔ ہم ایک قوم، ایک خاندان ہیں۔

ایک اور ٹوئٹ میں وشال دادلانی نے لکھا کہ میں بھی تمام ہندوستانیوں سے یہ کہنا چاہتا ہوں۔ مجھے ہندوستانی سیاست کی بدصورت نوعیت پر واقعی افسوس ہے، جو ہمیں اس وقت تک چھوٹے گروہوں میں تقسیم کردے گی جب تک کہ ہم اکیلے نہیں کھڑے ہوتے۔ یہ سب کچھ ذاتی مفاد کے لیے کیا جا رہا ہے عوام کے لیے نہیں، انہیں ہرگز جیتنے نہ دیں۔وشال ددلانی کے ٹوئٹ پر شوبھم کوشل نے لکھا کہ بھائی، پہلے مجھے بتائیں کہ آپ اس ملک کے وزیر اعظم ہیں، جو سب کی طرف سے بات کر رہے ہیں۔

سری چرن نے لکھا کہ اکثریتی ہندوؤں کی طرف سے، میں ہندوؤں کی اکثریت کو بتانا چاہتا ہوں کہ یہ بندہ ہندوؤں کی اکثریت کی نمائندگی نہیں کرتا ہے۔انشومن کالی داس نے لکھا کہ دم ہے تو مہاراشٹر حکومت، بالی ووڈ خان مافیا، کرن جوہر گینگ کے خلاف ایک ٹویٹ کریں۔ ہمیں معلوم ہو جائے گا کہ آزادی اظہار کی قیمت کیا ہے۔ وشال سوشل میڈیا پر کافی ایکٹو ہیں۔ اپنے خیالات کو سب کے سامنے رکھنے پر بھی انہیں کافی ٹرول بھی کیا جاتا ہے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button