مضامین و مقالات

فرقہ پرستوں کے عزائم نے ہمیں کیا دیا ! از قلم : شاہد صدیقی جمدہاں جون پوری

آج کل پورے ملک کے جو حالات ہیں وہ ہم میں سے کسی پر مخفی نہیں آئے دن ظلم کی حدیں توڑی جارہی ہیں جب کہ یہ ملک ایک جمہوری ملک ھے اور پوری دنیا میں اپنی جمہوریت کی وجہ سے ایک الگ شناخت بنائے ھوئے ھے جو کہ ایک پیہم جدو جہد کے بعد انگریزوں سے لڑ کر ایک عظیم قربانی دے کر ھم برادران وطن کو میسر آئ لیکن آج پانچ ساڑھے پانچ سالوں سے یہ ملک ان انگریزوں کی ناجائز اولاد کے ہتھے چڑھ گیا جس کا نام آر ایس ایس ہے بی جے پی ہے جو کہ آزادئ وطن کے مخالف ہیں اور تقسیم وطن کے موافق ہیں انھوں نے جھوٹ بول کر عوام کو سبز باغ دکھلا کر سب کا ساتھ سب کا وسواس کا نعرہ لگا کر ملک پر قبضہ کرلیا اور ہر محکمہ( department) میں بیٹھے سیکولر ذھن آدمی کو نکال کر اپنے ہمنوا آفیسروں کو بٹھایا تاکہ ملک میں اپنے نظریات کو جلد از جلد نافذ کیا جا سکے ملک کو کسی طرح ہندو راشٹر بنایا جاسکے اور بھارت کی ایک بہت بڑی تعداد کو اپنا غلام بنایا جاسکے لیکن پچھلے پانچ سالوں میں سعی بسیار کے باوجود کچھ ھاتھ نہ آیا سوائے ظلم و فساد ،تین طلاق اور نوٹ بندی کے جس کی وجہ سے ملک کا ایک بڑا طبقہ ان سے دور ھونے لگا نوبت یہاں تک آ پہنچی کہ کرسی اقتدار جانے کا خطرہ منڈلارھا ہے اس کو بچانے کے لیے ان کو یہ فکر لاحق ہوئ کہ مسلمانوں سے ووٹ دینے کا حق چھین لیا جائے اور ہمیشہ ہمیش کے لیے اس ملک کو اپنے قبضہ میں کرلیا جائے
اسی وجہ سے اس مرتبہ جب سے کرسی اقتدار ھاتھ لگا ھے اسی دن سے یہ ملک کے غدار کھلم کھلا آئین کے خلاف مسلمانوں کے مخالف قانون بنا کر مسلمانوں میں ایک ڈر کا ماحول پیدا کررھے ہیں کبھی 370 ھٹا کر کبھی ہماری بابری مسجد کو ھم سے زبردستی چھین کر حد تو اس وقت ھوئ جب ایک قیامت صغری ھمارے سامنے کالے قانون CAA، NPR ،NRC کی شکل میں آئ ان کالے اور غیر آئین قانون سے مسلمانوں میں ڈر پیدا کرنے کی زبردست کوشش کی گئی کہ پڑوسی کے تین ملک سے مذھب کی بنیاد پر پریشان ھو کر آئے ھوئے صرف چھ مذھب کے لوگوں کو بھارت کی شہریت دی جائے گی لیکن مسلمانوں کو نھیں بظاھر ان ظالم حکمرانوں و غدار وطن فرقہ پرستوں کو ایسا محسوس ھوا کہ ایوان پارلیمنٹ میں عددی اکثریت کی بنیاد پر پاس کرا کر طاقت کے بل پر پورے بھارت میں عملی پیرہن دے دیں گے اس کے بعد NPR NRC لاگو کر کے مسلمانوں کی ایک بھت بڑی تعداد کو ڈٹینشن کیمپ میں رکھ کر ملک بدر ہونے پر مجبور کریں گے
شاید انہیں یہ بات معلوم نہیں تھی کہ ان کے غلط عزائم و ظلم نے مسلمانوں کے صبر کی انتہا کردی ہے ان کے فتنہ و فساد سے بھرا ساڑھے پانچ سال ظالمانہ دور حکومت میں مسلمانوں کی خموشی نے شیخ الہند(مولانا محمود حسن صاحب دیوبندی رحمتہ اللہ علیہ)کی طرح قربانی دینے کا جذبہ پیدا کردیا ھے اور شیخ الھند کی روح بھارت کی آئین کی حفاظت کی طرف متوجہ ہو چکی ھے، شیخ الاسلام (مولانا حسین احمد مدنی علیہ الرحمتہ) کی شجاعت و بہادری مسلمانوں کو للکار کر آزادی وطن کے لیے صف بہ صف کھڑی کرچکی ہے، صدر الصدور مفتی کفایت اللہ صاحب علیہ الرحمتہ کی دور اندیشی مسلمانوں کو بیدار کرچکی ھے، مہاتما گاندھی کی فکر و سوچ بھارت واسیوں کے دلوں میں پیار و محبت کا شمع روشن کر چکی ہے جسکی جھلک آج جامعہ ملیہ اسلامیہ ،جواھر لعل یونیورسٹی، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی،شاہین باغ، الہ آباد کا روشن باغ ، دلی کی جامع مسجد، کلکتہ کی یونیورسٹی سمیت پورے ملک کی متحدہ مظاہروں میں نظر آرہی ہے جو کہ ان فرقہ پرستوں کے لیے سانپ ڈسنے بھی زیادہ خطرناک ہے اس لیے وقت آگیا ھے کہ ہم سب برادران وطن کندھوں سے کندھا ملا کر اپنی ایک منظم صف بنا کر اپنے مشغولیات سے فارغ ہو کر وطن عزیز کو ان فرقہ پرستوں سے بچانے کے لیے سر بکف ہو کر میدان میں نکل جائیں اپنی حفاظت اور آنے والی نسلوں کے دین و ایمان کی حفاظت کے لیے باطل طاقتوں کے سامنے سینہ سپر ہو جائیں جب تک کہ یہ باطل طاقتیں خود منہ کی نہ کھا لیں یا زمیں بوس نہ جائیں

بھارت زندہ آباد
ھندو مسلم سکھ عیسائی آپس میں سب بھائی بھائی

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close