مدھیہ پردیش

مدھیہ پردیش میں مچھلی سے دوگنا کمانے کا لالچ دے کر کسانوں سے کروڑوں کا دھوکہ ، بی جے پی کی ایم ایل اے بھی اس میں شامل

بھوپال ،25؍ جون (ہندوستان اردو ٹائمز) مدھیہ پردیش میں مچھلی پالنے سے اپنی آمدنی کو دوگنا کرنے کا لالچ دے کر کئی کسانوں سے کروڑوں کی دھوکہ دہی کی گئی ہے۔ باقاعدہ معاہدکیا گیا ،کاغذات بنے ، لیکن شمش آباد سے بی جے پی کے ایم ایل اے بھی اس جال میں پھنس گئیں۔ باوجوداس کے پولیس نے اب تک کوئی سخت کارروائی نہیں کی ہے۔ اپنی کمائی سے تعمیر کیے گئے ان تالابوں سے لاکھوں کمائی کا وعدہ کیا گیا تھا ، لیکن شان تنو ، شیلندر جیسے متعدد کسانوں کے علاوہ شمش آباد سے بی جے پی کے ممبر اسمبلی راج شری رودپرتاپ سنگھ کے لاکھوں روپئے کا نقصان ہوا ۔ صرف ودیشہ میں 100 سے زیادہ افراد نے مچھلی فارمنگ میں لاکھوں روپئے کی سرمایہ کاری کی ہے۔

کسانوں کو بتایا گیا کہ وہ اپنی زمین میں مچھلی پالنے کا ایک بڑا کاروبار کرکے اپنی آمدنی کو دوگنا کرسکتے ہیں ، اس کے لئے فش کمپنی نے معاہدہ بیس فارمنگ کے نام پر فی ایکڑ 5 سے 10 لاکھ روپئے کی سرمایہ کاری کرائی اور کہا کہ ایک میں سال رقم دوگنی ہوجائے گی۔ اس اسکیم میں سرمایہ کاری کرنے والے شیلندر کھتری نے بتایا کہ کمپنی نے ہمیں بتایا تھا کہ کسانوں کو 20 ماہ میں دوگنی رقم مل جائے گی۔ کنٹریکٹ فارمنگ کی اسکیم بتائی تھی باقاعدہ معاہدہ کیا تھاکہ ساڑھے 5 لاکھ جمع کروانے پر آپ کو ماہانہ 60000 روپئے ملیں گے ، چوکیدار اور بجلی کے لئے 8000 روپئے الگ سے ملیں گے، مچھلی کابیج دیا جائے گا ، ماہرین آئیں گے اور اس کی دیکھ بھال کریں گے ، لیکن معاہدے کی کسی بھی شرائط پر عمل نہیں کیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close