مدھیہ پردیش

مدھیہ پردیش: تقریباً 3000ڈاکٹروں نے بیک وقت دے دیا استعفیٰ ، ہائی کورٹ نے کہا -24گھنٹے میں کام پر واپس آجائیں

بھوپال،04؍ جون (ہندوستان اردو ٹائمز) مدھیہ پردیش کے 6 میڈیکل کالجوں کے تقریبا 3,000جونیئر ڈاکٹروں نے اجتماعی طورپر استعفیٰ دے دیا ہے جمعرات کو ہی ہائی کورٹ نے ان کی ہڑتال کو غیر آئینی قرار دیتے ہوئے 24 گھنٹوں کے اندر کام پر واپس آنے کی ہدایت کی تھی۔ جونیئر ڈاکٹرز تنخواہ میں اضافہ اورکورونا ہونے پر اس کے اور ان کے اہل خانہ کے لئے مفت علاج میں کرانے کا حکومت سے مطالبہ کررہے تھے ۔

مدھیہ پردیش جونیئر ڈاکٹرز ایسوسی ایشن (ایم پی جے ڈی اے) کے صدر ڈاکٹر اروند مینا نے کہا کہ ریاست کے چھ سرکاری میڈیکل کالجوں میں کام کرنے والے تقریبا 3000 جونیئر ڈاکٹروں نے جمعرات کے روز اپنے عہدوں سے اجتماعی طورپراستعفیٰ دے دیا۔ انہوں نے کہا کہ پیر سے شروع ہونے والی ہڑتال ان کے مطالبات تسلیم ہونے تک جاری رہے گی۔مینا نے کہا کہ ریاستی حکومت نے پی جی کے تیسرے سال کے لئے ان کا رجسٹریشن پہلے ہی منسوخ کردیا ہے اور اس وجہ سے وہ امتحانات میں شرکت نہیں کرسکیں گے ، انہوں نے کہا کہ ایم پی جے ڈی اے ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل کرے گی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close