مدھیہ پردیش

مدھیہ پردیش کے شاہڈول میں آکسیجن کی کمی سے 12 مریضوں کی موت ،ریاستی حکومت ناکام

بھوپال، 18 اپریل (ہندوستان اردو ٹائمز) کورونا انفیکشن کے معاملات میں ملک میں ہر روز پرانا ریکارڈ ٹوٹ رہا ہے۔ ہر روز کورونا انفیکشن کے نئے کیس ریکارڈ سطح پر آرہے ہیں اور زیادہ تر اموات ہو رہی ہیں۔ ملک کے بہت سارے اسپتالوں میں بیڈ دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے تو کہیں آکسیجن کی کمی کی وجہ سے مریض دم توڑ رہے ہیں۔ ایسا ہی ایک معاملہ مدھیہ پردیش کے شہڈول کے میڈیکل کالج سے منظرعام پر آیا ہے، جہاں ہفتے کے روز سے کورونا کے 12 مریض آکسیجن کی کمی کے باعث فوت ہوگئے ہیں۔ ان میں سے 10 کی موت کل صبح 7:30 بجے سے شام 6:00 بجے تک ہوئی، جبکہ دو مریض دیر رات دم توڑ گئے۔

معلومات کے مطابق یہ تعداد مزید بڑھ سکتی ہے۔شاہڈول میں روزانہ کورونا کے معاملات آنے کی وجہ سے یہاں واقع میڈیکل کالج پر دباؤ میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ آکسیجن کی کمی کی وجہ سے یہاں داخل ہونے والے کورونا مریضوں کی حالت خراب ہوتی جارہی ہے۔ جمعہ تک 240 مریضوں کو یہاں علاج کے لئے داخل کیا گیا تھا، لیکن ان کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ ضلع اندال پور کے میڈیکل کالج شاہڈول، عمریہ کے علاوہ قریبی اضلاع سے بھی قریبی متاثرہ مریض داخل ہونے کے لئے آ رہے ہیں۔ ہفتے کے روز شہڈول ضلع میں کورونا کے 216 واقعات رپورٹ ہوئے۔ اس وقت یہاں کورونا کے 1163 فعال واقعات ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close