مدھیہ پردیش

ایم پی : مہاراشٹر کے بعد اب چھتیس گڑھ کی سرحد سیل ، جہاں ضرورت ہوگی،وہاں لاک ڈاؤن نافذ کیا جائے گا : شیوراج سنگھ

بھوپال ، 4اپریل ( آئی این ایس انڈیا ) اطلاع کے مطابق مدھیہ پردیش میں کورونا بے قابو ہوچکا ہے، متاثرہ افراد کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ 3 اپریل ، 3178 کو انفیکشن پایا گیا تھا۔ اب انفیکشن کی شرح 11 فیصد تک جا پہنچی ہے۔ 31 اضلاع میں کورونا کے 20 سے زیادہ کیسز پائے گئے ہیں۔ اب چھتیس گڑھ سے متصل ریاست کی سرحدوں کو بھی سیل کردیا گیا ہے۔ مہاراشٹرا کی سرحد پہلے ہی سیل کردی گئی تھی۔ سی ایم شیوراج سنگھ چوہان نے بڑھتے ہوئے کورونا کیس پر کہا کہ جہاں ضرورت ہوگی، وہاں لاک ڈاؤن نافذ کیا جائے گا۔اندور میں سب سے زیادہ 737 کیسز پائے گئے ہیں۔ بھوپال میں 536 ، جبل پور میں 224 اور گوالیار میں 120 افراد متاثر پائے گئے ہیں۔ ریاست میں فعال کیسوں کی تعداد بھی 20 ہزار 369 تک جا پہنچی ہے۔ حکومت کا اندازہ ہے کہ اپریل کے آخر تک کرونا اپنے ’’شباب‘‘ کو پہنچ سکتا ہے۔ اس کے پیش نظر حکومت نے ایک بار پھر کووڈ کیئر سنٹر قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔3 اپریل کو اندور میں دو افراد انفیکشن کے باعث ہلاک ہوگئے۔ اندور میں ایک ماہ میں اب تک زیادہ سے زیادہ فعال کیسزمیں 4.75 گنا اضافہ ہوا ہے۔ یہاں 5209 فعال کیسز ہیں۔ سی ایم شیوراج سنگھ چوہان نے یہاں دس ہزار مزید بستروں کا بندوبست کرنے کو کہا ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close